کچہری کی واپسی، وکلاء کاجشن، دھرنا، آج یوم تشکر منائیں گے

کچہری کی واپسی، وکلاء کاجشن، دھرنا، آج یوم تشکر منائیں گے

ملتان(خبر نگار خصوصی) چیف جسٹس پاکستان ثاقب نثارنے ملتان کی عدالتوں کی واپسی کاحکم دیتے ہوئے 10 روزمیں عدالتیں واپس منتقل کرنے اور3 ماہ میں نیوجوڈیشل کمپلیکس میں (بقیہ نمبر11صفحہ12پر )

سہولیات فراہمی کاحکم جاری کردیاجس پر وکلاء نے جشن مناتے ہوئے دھرناختم کرنے اور آج یوم تشکرمنانے کااعلان کردیاہے۔تفصیل کے مطابق وکلاء کے جانب سے عدالتوں کی ضلع کچہری سے نیوجوڈیشل کمپلیکس میں منتقلی کے خلاف نے گزشتہ 8 روزقبل دھرنے کاآغازکرتے ہوئے عدالتوں کی دوبارہ ضلع کچہری منتقلی اور مقدمہ خارج کرنے کے حتمی مطالبات پیش کئے۔ اس ضمن میں چیف جسٹس پاکستان سے مذاکرات کئے گئے اوروکلاء کی جانب سے بتایاگیاکہ فاضل چیف جسٹس پاکستان کونیوجوڈیشل کمپلیکس میں سہولیات کے حوالے سے درست طورپر آگاہ نہیں کیاجارہاہے جس پرچیف جسٹس پاکستان نے ایک روزقبل ملتان کادورہ کرکے صورتحال کا جائزہ لیااورگزشتہ روزسپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں ملتان میں عدالتوں کی منتقلی کے ازخودنوٹس پر سماعت کرتے ہوئے ملتان میں عدالتوں کی دوبارہ10 روزمیں ضلع کچہری میں منتقلی کاحکم جاری کرنے کیساتھ 3 ماہ میں نیوجوڈیشل کمپلیکس میں تمام سہولیات فراہم کرنے کاحکم دیاہے۔جس پر وکلاء نے چوک کچہری پردھرنے میں جشن منایااورڈھول کی تھاپ کے ساتھ مختلف ملی نغموں اور گیتوں پر بھی رقص کیا ایک دوسرے پرپھولوں کی پتیاں نچھاور کرنے کے ساتھ تحریک کے رہنماؤں کو پھولوں کے ہارپہناکرکندھوں پراٹھالیا اورچیف جسٹس پاکستان کے حق میں نعرے لگانے کے ساتھ جشن مناتے رہے جس کے بعد دھرنا ختم کرنے کے ساتھ آج ضلع کچہری میں یوم تشکرمنانے کااعلان کردیاہے۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے صدر ہائیکورٹ بارملتان شیر زمان قریشی نے کہاکہ آج ملتان کے وکلاء نے ایک بارپھرثابت کر دیاہے کہ ملتان سے جس تحریک کابھی آغازہواوہ کامیابی سے ہمکنارہوئی ہیاوریہ کامیابی پوری وکلاء برادری کی کامیابی ہے اورپورے پاکستان کے وکلاء اگر اس طرح متحدہوکر جدوجہدکریں تو کوئی بھی ان کا حق نہیں مارسکتاہے۔صدرڈسٹرکٹ بارملتان محمدیوسف زبیرنے کہاکہ وکلاکی اس معاملہ پر جدوجہدکوئی آسان نہیں تھی اورایک مشکل مرحلہ درپیش تھالیکن وکلاء کے ثابت قدم رہنے کی وجہ سے اللہ نے کامیابی سے نوازا ہے۔جس کے لئے چیف جسٹس پاکستان کے مشکورہیں کہ انھوں نے خوددورہ کرکے صورتحال کاجائزہ لیااور ملتان کے باسیوں کوخوشی کی نوید دی اس طرح اس جدوجہدمیں شریک جنوبی پنجاب کی تمام بارز،سپریم کورٹ باراورلاہوربارکے بھی مشکورہیں جنہوں نے سیاست سے بالاترہو کرحقیقی معنوں میں جدوجہدکی اوراپنی منزل کوحاصل کیا۔جنرل سیکرٹری ڈسٹرکٹ بار سیدانیس مہدی نے کہاکہ ایگزیکٹوباڈی کی جانب سے پوری وکلاء برادری کومبارکبادپیش کرتے ہیں کیونکہ جیت ہمارامقصدتھی اوررہے گی۔اس کے لئے اگر ہم متحدنہیں ہوتے تو کبھی اپنامقصدحاصل نہیں کرسکتے تھے۔جس کے سول سوسائٹی ،سرائیکی تنظیموں اورانجمن تاجران کے بھی مشکورہیں۔ممبران پنجاب بارکونسل خواجہ قیصر بٹ اورجاوید ہاشمی نے کہا کہ وکلاء کی جانب سے اپنے حق کے لئے جدوجہدکی گئی اوریہ کسی ہارجیت کے لئے نہیں تھی اس لئے آج وکلاء نے اپناحق حاصل کرلیاہے۔سابق صدر ہائیکورٹ بارملتان محمود اشرف خان نے کہاکہ وقت نے پھرثابت کردیاہے کہ اگرنیت صاف ہواورجدوجہدخالص ہوتو کوئی بھی رکاوٹ منزل حاصل کرنے سے روک نہیں سکتی اس لئے آج ملتان اورجنوبی پنجاب کے غیوروکلاء نے اپنی جدوجہدسے ثابت کردیاہے کہ وکلاء کاحق کوئی چھین نہیں سکتاہے اورکالی بھیڑیں اسی طرح ہزیمت اٹھاتی رہیں گی اورغیور وکلاء متحد رہ کراپنے مقاصدحاصل کرتے رہیں گے۔وکلاء ایکشن کمیٹی کے مرزافرح بیگ نے کہاکہ ملتان با ر کو ریت کی دیوارسمجھنے والے دیکھ لیں کہ وکلاء کی جدوجہداورمحنت رنگ لے آئی ہے اورآئندہ بھی وکلاء مخالفین کومنہ کی کھانی پڑ ے گی۔وکلاء ممتازملک،بدررضا گیلانی،شاہ زیب افشار،اقبال مہدی زیدی،اورنگ زیب بلوچ،ثمینہ محمود رانا، نے کہاکہ وکلاء کی جدوجہد کامیاب ہوگئی اوروکلاء نے اپنے آپ کوطاقت ثابت کردیاہے اوراب کچہری پھر منتقل نہیں ہوگی۔ اس موقع پرمہر ارشادآرائیں،جاوید ڈوگر، عامر بھٹہ اور رانا عمیق نے بھی خطاب کیاہے۔ دریں اثناء وکلاء نے گزشتہ رات بھی ضلع کچہر ی میں جشن منایاجورات گئے تک جاری رہا جس میں بھی چیف جسٹس پاکستان کے حق میں نعرے لگائے گئے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر