باچا خان میڈیکل کمپلیکس صوابی کے ڈاکٹروں کی مطالبات کے حق میں ہڑتال

باچا خان میڈیکل کمپلیکس صوابی کے ڈاکٹروں کی مطالبات کے حق میں ہڑتال

ٹوپی (نامہ نگار) باچا خان میڈیکل کمپلکس صوابی کے ڈاکٹروں کی ہڑتال ، او پی ڈی اور او ٹی بند ۔ صوبائی وزیر صحت ہیلتھ پروفیشنل الاونس سے محرومی کا ازالہ اورتعنینانی کے وقت مراعاتی پیکج کا وعدہ پوارا کریں مریض بے چارے رُل گئے وارڈوں میں مریضوں کا درد اور تکلیف سے برا حال ، ڈاکٹرز اتنے بہت سارے مراعات اور تنخواہوں میں اضافہ کے با وجود خوش نہیں تو حکومت خزانہ کی چابیاں ان کے حوالہ کریں ، ایک تیمار دار کا مؤقف باچاخان میڈیکل کمپلکس صوابی کے ڈاکٹروں کے ہڑتال کی وجہ سے چلڈرن وارڈمیں گلاب جیسے ننھے منے پھول درد اورتکلیف کی وجہ سے چیختے چلا تے رہے ماؤں کے آنکھوں سے بے بسی کے آنسو ں بہتے رہے ان کے درد کا مداواں کر نے والا کوئی نہیں تھا اس ٹھٹر تی سردی میں مریضوں کے رشتے دار برآمدے میں ٹھنڈے فرش پر سوتے رہتے ہیں ان کو اپنی تکلیف کا کوئی پر وا نہیں وہ صرف یہ چاہتے ہیں کہ ہماری مریضوں کا تسلی بخش علاج معالجہ ہو مگر وہ بھی نا پید تھا دوسری طرف ڈاکٹروں کا مطالبہ ہے کہ ایچ پی اے محرومی کی ازالہ اور تعنیناتی کے وقت ہمارے ساتھ مراعاتی پیکج کا کیا گیا وعدہ پورا ہو نے تک ہڑتال اسی طرح جاری رہے گا ان کا مؤقف ہے کہ ہماری چھ ماہ کے پر امن احتجاج اور وزیر صحت اور سپیکر صوبائی اسمبلی کے یقین دہانیوں کے با وجود ہمارا مطالبہ اسی طرح ہے جب کہ وارڈ میں ایک مریض کی تیمار دار نے ہمارے نمائندے کو کہا کہ میرے دبئی سے پلٹے ہوئے تیسرا دن ہے اور یہ تین دن میں نے اپنے مریض کے ساتھ ہسپتال میں گزارے ڈاکٹر حضرات صرف پیسے کیلئے نہیں بلکہ عوامی خدمت کے جزبے کے تخت بھی کچھ کیا کریں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر