بھارتی فورسز نے شوپیاں کی روبینہ جان کو گھر میں گولی مار کر شہید کیا

بھارتی فورسز نے شوپیاں کی روبینہ جان کو گھر میں گولی مار کر شہید کیا

سرینگر (این این آئی) مقبوضہ کشمیرکے ضلع شوپیاں کے علاقے وانپورہ میں منگل کو بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں شہید ہو نے والی خاتون روبینہ جان کے اہلخانہ کا کہنا ہے کہ وہ کسی احتجاجی مظاہرے میں شامل نہیں تھی بلکہ گھر میں ہی گولی لگنے سے شہید ہوئی ۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق اہلخانہ کے مطابق روبینہ جان اپنے گھرمیں آٹھ ماہ کی بچی گود میں لئے کھڑکی کے پاس بیٹھی تھی جب بھارتی فورسز نے دو نوجوانوں کی شہادت پر احتجاج کرنے والے مظاہرین پر اندھادھند فائرنگ کی اور ایک گولی روبینہ کے پیٹ میں لگنے سے وہ خون میں لت پت ہوگئی او ر بچی اس کی گود سے گرگئی ۔ روبینہ جان کے بھائی محمد یعقوب نے صحافیوں کو بتایا کہ ان کی بہن کسی احتجاجی مظاہرے میں شامل نہیں تھی بلکہ گھر میں موجود تھی جب اسے گولی لگی۔ انہوں نے بھارتی پولیس کے دعوے کو من گھڑت اور جھوٹ کا پلندہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ روبینہ کو گھر میں گولی مار کر شہیدکیاگیا ۔انہوں نے کہاکہ روبینہ کی آٹھ ماہ کی معصوم بچی یہ بھی نہیں جانتی کہ اْس کی ماں کہاں چلی گئی ہے۔یعقوب نے کہاکہ روبینہ اپنے والدین کے گھر میں مقیم تھی، گولی لگنے کے بعد اسے شدید زخمی حالت میں ہسپتال پہنچایاگیاجہاں ڈاکٹروں نے مردہ قراردیا۔انہوں نے کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ سے مطالبہ کیا کہ اس واقعہ کی تحقیقات کی جائے اور انہیں انصاف دلایا جائے۔ روبینہ کے دیور غلام محمد بٹ نے صحافیوں کو بتایا کہ روبینہ گھر میں موجود تھی جب اسے گولی لگی ۔

مزید : ملتان صفحہ اول