سعودی عرب میں کفیل کی طرف سے رہائش کیلئے دیئے گئے اپارٹمنٹ میں ایشیائی شہری نے ایسا کاروبار شروع کردیا کہ پورے علاقے میں دھوم مچ گئی لیکن پھر ۔ ۔ ۔

سعودی عرب میں کفیل کی طرف سے رہائش کیلئے دیئے گئے اپارٹمنٹ میں ایشیائی شہری ...
سعودی عرب میں کفیل کی طرف سے رہائش کیلئے دیئے گئے اپارٹمنٹ میں ایشیائی شہری نے ایسا کاروبار شروع کردیا کہ پورے علاقے میں دھوم مچ گئی لیکن پھر ۔ ۔ ۔

  

جدہ (ویب ڈیسک) سعودی عرب جیسے ممالک میں عمومی طورپر ایشیائی باشندے ملازمت کیلئے جاتے ہیں لیکن بعض لوگ زیادہ سے زیادہ رقم کمانے کے لیے ایسے کام شروع کردیتے ہیں جس کی وجہ سے تھوڑی رقم سے بھی ہاتھ دھو بیٹھتے ہیں اور مشکلات سے دوچار ہوتے ہیں ، ایسا ہی کچھ ایک ایشیائی ڈرائیور اور اس کے دوست نے کیا جنہوں نے کفیل کی طرف سے رہائش کیلئے ملنے والے اپارٹمنٹ میں شراب کی بھٹی کھول لی ۔ 

لائیو ٹی وی نشریات کیلئے یہاں کلک کریں۔

تفصیلات کے مطابق ایک سعودی فیملی کے ڈرائیور اور اس کے ایشیائی ساتھی نے کفیل کے مکان کے اس حصے کو جس نے انہیں رہائش کیلئے مختص کیا تھا شراب کے اڈے میں تبدیل کردیا اور وہ پوری کمشنری کو شراب فراہم کررہے تھے۔ کمشنری کے باہر سے بھی لوگ ان کے یہاں سے شراب کی بوتلیں حاصل کرنے پہنچ جاتے تھےلیکن  زیادہ ترغیرملکیوں کیساتھ کاروبار کرنے کی وجہ سے کفیل کو اس کا علم  نہیں تھا۔اس اپارٹمنٹ میں ایک کمرہ ، کچن اور واش روم تھا جبکہ باہر کے دروازے کا استعمال کرکے مکروہ کار وبار کو یہاں تک لایاگیا۔ خفیہ اطلاع پر پولیس نے چھاپہ مار کر 16لیٹر والے 7 ڈبے شراب، مختلف حجم کے 11ڈبے اور شراب کی تیاری میں کام آنے والے آلات برآمد کرکے ضبط کرلیا۔

مزید : عرب دنیا /جرم و انصاف