اقوام متحدہ سے قراداد کی منظوری ،اسرائیلی صدر بوکھلا گئے ،ایسا بیان جاری کر دیا کہ مزید جگ ہنسائی کا سبب بن گئے

اقوام متحدہ سے قراداد کی منظوری ،اسرائیلی صدر بوکھلا گئے ،ایسا بیان جاری کر ...
اقوام متحدہ سے قراداد کی منظوری ،اسرائیلی صدر بوکھلا گئے ،ایسا بیان جاری کر دیا کہ مزید جگ ہنسائی کا سبب بن گئے

  

یروشلم(ڈیلی پاکستان آن لائن) اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں مقبوضہ بیت المقدس سے متعلق امریکی صدر کے اعلان کے خلاف پیش کی جانے والی قرارداد کے منظور ہونے سے اسرائیل بوکھلاگیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:دہشتگردوں کے محفوظ ٹھکانے ختم کردیے ، امریکی نائب صدراور پینٹاگون کے الزامات باعث تشویش ہیں: سیکرٹری خارجہ

غیر ملکی میڈیا کے مطابق  وزیراعظم نتن یاہو نے رائے شماری کے نتائج کو مسترد کرتے ہوئے اسے ’جھوٹ کا گڑھ‘ قرار دیا۔انھوں نے ایک بیان میں کہا کہ اسرائیل یروشلم کے حوالے سے امریکہ کی واضح پوزیشن پر صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا شکریہ ادا کرتا ہے اور ان ممالک کا بھی جنھوں نے اسرائیل اور سچ کے حق میں ووٹ دیا۔

واضح رہے کہ اقوامِ متحدہ کی جنرل اسمبلی نے گذشتہ روز وہ قرارداد منظور کرلی ہے جس میں امریکہ سے کہا گیا ہے کہ وہ مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا اعلان واپس لے۔ قرارداد کے حق میں 128 ممالک نے ووٹ دیئے جن میں پاکستان بھی شامل ہے۔ 35 ممالک نے ووٹنگ میں حصہ نہیں لیا جبکہ 9 ممالک نے اس قرارداد کی مخالفت کی تھی،دلچسپ بات یہ تھی کہ امریکی صدر ٹرمپ کی کھلی دھمکیوں کے باوجود کسی ایک بھی بڑے اور معروف ملک نے اس قرارداد کی مخالفت نہیں کی تھی ۔

لائیو ٹی وی پروگرامز اور اپنی پسند کے ٹی وی چینل کی نشریات ابھی لائیو دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں

مزید : بین الاقوامی