’ پاکستانی انٹیلی جنس ایجنسی روہنگیا مسلمانوں کے ساتھ مل کر ہمارے خلاف یہ کام کر رہی ہے‘ بنگلہ دیش نے انتہائی سنگین الزام لگا دیا، نیا خطرہ پیدا ہو گیا

’ پاکستانی انٹیلی جنس ایجنسی روہنگیا مسلمانوں کے ساتھ مل کر ہمارے خلاف یہ ...
’ پاکستانی انٹیلی جنس ایجنسی روہنگیا مسلمانوں کے ساتھ مل کر ہمارے خلاف یہ کام کر رہی ہے‘ بنگلہ دیش نے انتہائی سنگین الزام لگا دیا، نیا خطرہ پیدا ہو گیا

  

ڈھاکہ (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان پر بے بنیاد لگانا صرف بھارت کا ہی وطیرہ نہیں بلکہ اس کے زیر اثر کچھ دیگر ممالک میں وقتاً فوقتاً اسے خوش کرنے کے لئے پاکستان کے خلاف اس قسم کی ہرزہ سرائی کرتے رہتے ہیں۔ بنگلا دیش بھی ان ممالک میں شامل ہے جو گاہے بگاہے بھارت کے اشارے پر پاکستان کے خلاف پراپیگنڈہ کرتا ہے۔ اب کی بار اس نے پاکستان کے خلاف زہر اگلنے کی کوشش میں مصائب کے مارے روہنگیا مسلمانوں کو بھی ساتھ لپیٹ لیا ہے۔ 

بنگلا دیشی وزیر ٹرانسپورٹ بھارت کے دورے پر گئے تو یہ بات نہیں بھولے کہ میزبان کو خوش کرنے کے لئے پاکستان کو نشانہ بنانا ہے، لہٰذا جھٹ سے الزام لگا دیا کہ پاکستانی انٹیلی جنس ایجنسی روہنگیا مسلمانوں کے ساتھ ملکر بنگلا دیش میں بے امنی کو فروغ دینے کی کوشش کر رہی ہے ۔ موصوف کہنے لگے کہ ’’پاکستان ہمارے ملک میں ہونے والا کوئی بھی اچھا کام برداشت نہیں کر سکتا۔ وہ ہمیشہ ہمارے خلاف سازشیں کرتا ہے اور روہنگیا مسلمانوں کے درمیان موجود شدت پسند عناصرکو بھی اس مقصد کیلئے استعمال کر رہا ہے۔ ‘‘

بنگلہ دیشی تجزیہ کار بھی وزیر موصوف کی ہاں میں ہاں ملانے میں پیچھے نہیں رہے۔ انسٹیٹیوٹ آف کانفلیکٹ ، لاء ا ینڈ ڈویلپمنٹ سٹڈیز ڈھاکا سے وابستہ تجزیہ کار عبدالراشد کا کہنا تھا ’’ آرا کان روہنگیا سالویشن آرمی کے راہنما زیادہ تر روہنگیا کمیونٹی سے تعلق رکھتے ہیں اور ہماری سیکیورٹی ایجنسیوں کے پاس ثبوت ہیں کہ جو شخص اس وقت اس گروپ کی سربراہی کر رہا ہے اس کا تعلق پاکستان سے۔ اس کے والدین بھی پاکستان میں قیام پزیر رہے ہیں۔‘‘

مزید : بین الاقوامی