عوام جان چکے سٹیٹس کو سے نجات حاصل کیے بغیر ملک کو پٹڑی پر ڈالنا ممکن نہیں: سراج الحق 

عوام جان چکے سٹیٹس کو سے نجات حاصل کیے بغیر ملک کو پٹڑی پر ڈالنا ممکن نہیں: ...

  

 لاہور (نمائندہ خصوصی)امیر جماعت اسلامی سینیٹرسراج الحق نے کہا ہے کہ محلات میں رہنے والے حکمرانوں کو عوام کے مسائل کا ادراک کیسے ہو سکتا ہے۔ پی ٹی آئی نے سابقہ ادوار کی داخلہ و خارجہ پالیسیوں کو پوری تندہی سے جاری رکھا ہوا ہے۔ قوم کو ریاست مدینہ اور تبدیلی کے نعروں پر دھوکا دیا گیا۔ عوام جان چکے ہیں کہ سٹیٹس کو سے نجات حاصل کیے بغیر ملک کو پٹڑی پر ڈالنا ممکن نہیں۔ زراعت، صنعت، تعلیم و صحت تباہی کے دہانے پر ہیں، عدالتوں اور تھانوں میں غریبوں کی کوئی شنوائی نہیں۔ کرونا وبا کے دوران حکومت نے لوگوں کو بے یارومددگار چھوڑ دیا۔ ویکسین کا بندوبست کیا جائے۔ فیملی لمیٹڈ اور ون مین شو کی سیاست سے نجات اور پائیدار اسلامی جمہوری نظام کے قیام کے لیے عوام جماعت اسلامی کے دست و بازو بنیں۔ گوجرانوالہ میں 25دسمبر کو جلسہ سے مہنگائی، بے روزگاری کے خلاف تحریک کے دوسرے فیز کا آغاز ہو گا۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے لوئر دیر میں عوامی وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔سینیٹر سراج الحق جو گزشتہ روز ہی سندھ کا چھ روزہ دورہ مکمل کر کے اپنے آبائی علاقہ میں پہنچے ہیں کا کہنا تھا کہ یہ بات روز روشن کی طرح واضح ہو چکی ہے کہ ملک پر گزشتہ7دہائیوں سے مسلط اشرافیہ عوام کے دکھ درد کا مداوا نہیں۔ محلات میں رہنے والے حکمران طبقہ نے آج تک پاکستان کو اسلامی فلاحی مملکت بنانے کے لیے کوئی قدم نہیں اٹھایا، بلکہ انھوں نے اس راہ میں روڑے اٹکانے کی بھی بھرپور کوشش کی۔بڑے بڑے محلات میں رہنے والے حکمران طبقہ کو عام گھروں اور جھونپڑیوں میں رہنے والے لوگوں کی مشکلات کا کیسے ادراک ہو سکتا ہے۔ کرپشن کا راگ الاپنے والے وزیراعظم نے نظام احتساب کو موثر بنانے کیلئے کوئی سنجیدہ قدم نہیں اٹھایا۔

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -