مسلمان ممالک سائنسی علوم پر توجہ دیکر کھو یا مقاما حاصل کرسکتے ہیں: ڈاکٹر عارف علوی 

  مسلمان ممالک سائنسی علوم پر توجہ دیکر کھو یا مقاما حاصل کرسکتے ہیں: ڈاکٹر ...

  

 اسلام آباد( آن لائن)صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے تعلیم اور صحت کی سہولیات کی فراہمی پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ مسلمان ممالک جدید سائنسی علوم کی تعلیم پر توجہ دے کر دنیا میں اپنا کھویا ہوا مقام حاصل کرسکتے ہیں، وہ اخلاق و علم کے مجموعہ سے دنیا میں ابھر کر سامنے آ سکتے ہیں۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے پیر کو گلوبل الفارابی فورم کے افتتاحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔صدر مملکت نے کہاکہ مستقبل مسلمانوں کا دکھائی دیتا ہے تاہم انہیں سخت محنت اور لوگوں کو تعلیم و صحت کی فراہمی کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں الفارابی کے اصولوں پر آگے بڑھنا چاہیے جو کہ موجودہ حالات کے تناظر میں قابل عمل ہیں۔ صدر مملکت نے کہا کہ دنیا اخلاقیات کی جانب نہیں دیکھ رہی تاہم مسلمان اخلاقیات کا خیال رکھتے ہیں اور وہ اخلاقیات اور علم کی بنیاد پر تبدیلی لا سکتے ہیں۔انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ کشمیر، فلسطین اور روہنگیا مسلمانوں کی حالت زار ابتر ہے۔ مسلمانوں کو سائنس اور ٹیکنالوجی کی تیزی سے ترقی کے ساتھ آگے بڑھنا چاہیے۔ مصنوعی ذہانت کے باعث علم میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے اسلامی تعاون تنظیم کی قائمہ کمیٹی برائے سائنس وٹیکنالوجی تعاون پر زور دیاکہ وہ امت مسلمہ کے نوجوانوں کو عصری علوم کی فراہمی میں اپنا کردار ادا کرے۔مسلمان فلسفیوں کی تعریف کرتے ہوئے صدر مملکت نے کہا کہ مسلمانوں کے دور کے باعث یونانی فلسفہ کو جدید دنیا میں لانے میں مدد ملی۔ الفارابی نے ریاضی، طبعیات اور موسیقی سمیت دیگر شعبوں میں اہم کردار ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ الفارابی کی کتاب المدین الفضیلہ میں ریاست مدینہ کی خوبیوں کو اجاگر کیا گیا ہے،

عارف علوی

مزید :

صفحہ آخر -