وفاقی حکومت 3سال سے بورڈ فعال کرنے میں ناکام، صدر زرعی ترقیاتی بینک توہین عدالت کے مرتکب: اسلام آباد ہائیکورٹ 

وفاقی حکومت 3سال سے بورڈ فعال کرنے میں ناکام، صدر زرعی ترقیاتی بینک توہین ...

  

 اسلام آباد(آئی این پی) اسلام آباد ہائیکورٹ نے زرعی ترقیاتی بینک کے 112 ملازمین کی تنزلی کیخلاف کیس میں وفاقی حکومت کو آئندہ سماعت تک بورڈتشکیل دینے کاحکم د یتے ہوئے ملازمین کی تنزلی پرحکم امتناع میں 18جنوری تک توسیع کردی۔پیر کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں زرعی ترقیاتی بینک کے 112ملازمین کی تنزلی کیخلاف کیس کی سماعت ہو ئی جس کے دوران عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا وفاقی حکومت گزشتہ 3سال سے بورڈکوفعال کرنے میں ناکام رہی،چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا یہ درست طریقہ نہیں،عدالت کافی عرصہ سے دیکھ رہی ہے،صدرزرعی ترقیاتی بینک توہین عدالت کے مرتکب ہوئے۔ عدالت نے زرعی ترقیاتی بینک کے وکیل سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا آپ کومطمئن کرناہوگا،سپریم کورٹ نے 3ماہ میں پالیسی فیصلے کرنے کاحکم دیاتھا،صدربینک درخواست دائرکرتے کہ وفاقی حکومت بورڈنہیں بنارہی،چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ اس کیس میں مزید دلائل دینابینک کیلئے شرمناک ہے،وفاقی حکومت بینک کابورڈتشکیل نہیں دے سکی،زرعی ترقیاتی بینک سپریم کورٹ ڈائریکشن کی کھلی خلاف ورزی کررہاہے۔ پالیسی فیصلے کرنے کیلئے 3سال سے بورڈہی نہیں بننے دیاگیا،قانون کے مطابق پالیسی بناناکس کاکام ہے؟عدالت نے استفسار کیا کس قانون کے تحت صدرزرعی ترقیاتی بینک پالیسی فیصلے کررہے ہیں؟،چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا بینک کوسپریم کورٹ فیصلے کااحترام کرناچاہئے۔

اسلام آباد ہائیکورٹ

مزید :

صفحہ آخر -