جدید ٹیکنالوجی سے ہی کاٹن کراپ کی بہتری ممکن‘ ڈاکٹر جسومل 

جدید ٹیکنالوجی سے ہی کاٹن کراپ کی بہتری ممکن‘ ڈاکٹر جسومل 

  

 ملتان(نیوز رپورٹر) پاکستان کاٹن جنرز ایسوسی ایشن کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس چیئرمین پی سی جی اے ڈاکٹر جسومل کی سربراہی میں پی سی جی اے ہاس،ایم ڈی اے روڈ، ملتان میں منعقد ہوگا۔ اجلاس میں تمام ممبران کو آگاہ کیاگیا کہ حال ہی میں پی سی جی اے(بقیہ نمبر35صفحہ 5پر)

 وفد کی اسلام آباد ایف بی آر میں وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے ریو نیو ڈاکٹر وقار مسعودخان، ممبر پالیسی طارق چوہدری اور چیف انکم ٹیکس پالیسی ڈاکٹر نجیب اللہ سے ملاقات میں یقین دہانی کر وائی گئی ہے کہ کاٹن جنرز کے ریٹرن کے مسئلے کو ترجیحی بنیادوں پر حل کر دیا جائے گا اور کاٹن جنرز متعلقہ چیف کمشنرز کو ریٹرن فائل کروانے کی تاریخ میں توسیع کے لیے درخواست جمع کر وادیں تاکہ مزید توسیع مل جائے۔ ساہیوال ریجن میں نوٹسز کے اجرا پر پی سی جی اے وفد نے چیف کمشنر و کمشنر سے ملاقات کر کے مسئلہ حل کر وا دیا ہے اور آئندہ غیر منصفانہ نوٹسز کا اجرا نہیں ہو گا۔کاٹن کراپ کی بحالی کے لیے تمام ممبران سے تجاویز لی گئیں اور چیئرمین نے کہا کہ ہم معیاری سرٹیفائیڈ سیڈ جدید ٹیکنالوجی موثر پیسٹی سائیڈ کے ذریعے کاٹن کراپ کو بہتر بنا سکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ برازیل نے چند سالوں 5 ملین سے کراپ کو 13ملین تک پہنچا دیا ہے ہمیں ان کے طریقہ کار پر عمل کر تے ہوئے اپنی کراپ سائز میں اضافہ کر نا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم اپنی کوششوں اور حکومت کے تعاون سے انشااللہ آنے والے سالوں میں کراپ کی بحالی میں نمایاں اضافہ دیکھیں گے۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ کاٹن کراپ کی بحالی اور جننگ اندسٹری کو نقصان سے بچانے کے لیے ہر طرح کے وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔اجلاس میں وزیر اعظم پاکستان اور متعلقہ وزرا سے بھی مطالبہ کیا گیا کہ کاٹن کراپ کی بحالی کے لیے کاٹن سٹیک ہولڈرز پر مشتمل نیشنل بورڈ کی  ہنگامی بنیادوں پر تشکیل دیا جائے تاکہ ملک میں روزگار، کاشتکار کی بحالی،ایکسپورٹ میں اضافہ،جی ڈی پی گروتھ میں اضافہ ممکن ہو اور کاٹن، خوردنی آئل و کھل میں تیار ہونے والی پام کی امپورٹ میں کمی لا کر امپورٹ بل کو کم کیا جا سکے اورمعیشت کو مضبوط کیا جا سکے۔اجلاس میں کاٹن کو فروغ دینے کے لیے متعلقہ صوبائی و وفاقی اداروں کے غیر متحرک ہو نے کا نوٹس لیتے ہوئے مطالبہ کیا گیا ہے کہ محکمہ زراعت، فیڈرل سیڈ سرٹیفکیشن،وزارت ٹیکسٹائل و نیشنل فوڈ سکیورٹی ودیگر متعلقہ ادارے اپنا فعال کردار ادا کریں اور کاٹن کی بقا کے لیے اپنا کردار نبھائیں۔ اجلا س میں ملک طفیل احمدسینئر وائس چیئرمین، چندر لال وائس چیئرمین،حافظ عبدالطیف، محمد ارشد، چوہدری وحید اختر، محمد اسحاق، محمد ارشد،غلام مصطفی، خواجہ محمد ارشد،عمران خان، چوہدری خالد رفیق، محمد ہارون ادریس، محمد شہباز، غلام قادر احمد، عمیر شبیر،ونیش کمار، رمیش بابو،روپن مل کے علاوہ سابق چیئرمین حاجی محمد اکرم، امان اللہ قریشی،شیخ محمد سعید،سابق وائس چیئرمین چوہدری وحید ارشد، مہر محمد اشرف مہار، غلام مصطفی کھنڈوا،داد کریم،را صدرالدین، شیخ عاصم سعید،میا ں جاوید طارق،سینئر ممبرچوہدری خالد بشیر،عاشق علی بابر رحمانی، خالد حنیف لودھی، رمیش لال،زیدعلی خان اور سیکر ٹری جنرل آصف خلیل شریک تھے۔ 

ڈاکٹر جسومل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -