بڑے لوگ بھی بچپن میں عام لوگوں کی طرح ہوتے ہیں: ممنون حسین

بڑے لوگ بھی بچپن میں عام لوگوں کی طرح ہوتے ہیں: ممنون حسین

  

لاہور(پ۔ر)بڑے لوگ بھی بچپن میں عام لوگوں کی طرح ہوتے ہیں یہ ان کی ان تھک محنت اور منزل پانے کا شعور ہوتاہے جو انھیں عام لوگوں کی صف سے نکال کر بڑے لوگوں کی صفوں میں پہنچادیتاہے۔یہ بات سابق صدرمملکت ممنون حسین نے ممتازمحقق اورشاعر صدرشعبہ اردوپنجاب یونی ورسٹی لاہور پروفیسر ڈاکٹر زاہد منیرعامرکی نئی کتاب”طلب کے لمحے“کے حوالے سے اظہار خیال کرتے ہوئے کہی۔انھوں نے کہاکہ ڈاکٹر زاہد منیرعامرنے کئی ممالک میں وطن عزیز کی نمائندگی کی ہے وہ بین الاقوامی حلقوں میں اردواور فکراقبال کے ایک سفیرکی حیثیت سے جانے جاتے ہیں۔ ڈاکٹرزاہدمنیرعامرنے اپنی اس نئی کتاب میں قومی تاریخ کے مشاہیر سرسید احمد خان،شبلی نعمانی، الطاف حسین حالی، قائداعظم محمدعلی جناح،محمدعلی جوہر، عبیداللہ سندھی،حسرت موہانی، ظفرعلی خان اور چودھری افضل حق کے دورِطالبِ علمی کو موضوع بنایا ہے۔ ڈا کٹر زاہد منیر عامر نے اپنی تحقیق کے ذریعے ان مشاہیرکی زندگیوں کے بالکل نئے پہلو قارئین کے سامنے پیش کیے۔

 ہیں۔اس تحقیق کے نتیجے میں ان راہ نماؤں کی زندگیوں کے وہ پہلو سامنے آئے ہیں جو اس سے پہلے نمایاں نہیں ہوسکے تھے۔ڈاکٹرزاہدمنیرعامرکی اس سے پہلے بیالیس کتابیں شائع ہوچکی ہیں۔نوجوان نسل کی تعلیم و تربیت کے حوالے سے ان کی کتب لمحوں کا قرض،لمحے کی روشنی،اپنی دنیاآپ پیداکر،آئینہ کردار،آرزواورمحبت امتحان ہے کو نسل نو میں خاص مقبولیت حاصل ہے۔طلب کے لمحے کا ملک بھرکی علمی وادبی حلقوں میں پرجوش خیرمقدم کیاجارہاہے۔یہ کتاب قلم فاؤنڈیشن انٹرنیشنل سے علامہ عبدالستارعاصم اور محمدفاروق چوہان نے شائع کی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -