ہواوے مڈل ایسٹ مقابلے کیلئے پاکستانی طلبہ کی ٹیموں کا علان

ہواوے مڈل ایسٹ مقابلے کیلئے پاکستانی طلبہ کی ٹیموں کا علان

  

لاہور(پ ر)ہواوے کے اس سال مڈل ایسٹICT مقابلے کے لیے  جیتنے والے پاکستانیوں کے ناموں کا اعلان کر دیا گیا ہے۔یہ مقابلے ہائر ایجوکیشن کمیشن آف پاکستان کی شراکت داری سے ہوئے تھے۔تین تین طلبہ اور ایک ایک ٹیچر پر مشتمل دو ٹیمیں اب اس سال کے ایونٹ  کے ریجینل فائنل میں حصہ لے رہی ہیں۔اس سالانہ مقابلے میں پاکستان اور مشرق وسطیٰ کے کالجوں اور یونیورسٹیوں کے ہزاروں طلبہ نے حصہ لیا،اورICT کے شعبہ میں تازہ ترین پیش رفت  کے بارے میں معلومات کی شیئرنگ کے ذریعے مستقبل میں ان کے روزگار کے امکانات میں اضافہ ہوا۔سماجی فاصلے کی پابندیوں کی وجہ سے اس سال ہواوے مڈل ایسٹ مقابلے میں طلبہ ورچوئل طریقے سے شریک ہوئے۔ابتدائی مقابلے اور ٹریننگenablement میں تمام رجسٹرڈ طلبہ نے حصہ لیا،جس کے بعد نیشنل فائنلز ہوئے جس میں ملک کے اندر آن لائن تحریری امتحان اور انٹرویو ہوئے۔اس سال کا مقابلہ جیتنے والوں کا تعلق تین یونیورسٹیوں سے ہے جن میں نیشنل یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی، بلوچستان یونیورسٹی آف انفارمیشن ٹیکنالوجی انجنیئرنگ اینڈ مینجمینٹ سائنسز اور مہران یونیورسٹی آف انجنیئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی جامشورو شامل ہیں۔انھیں ہواوے سرٹیفیکیشن اور دوسرے ایوارڈز دیئے گئے۔اس سال کی جیتنے والی ٹیموں کو پاکستان میں 100 فائنلسٹس میں سے چنا گیا جنھوں نے بعد میں ابتدائی راؤنڈ میں مقابلہ کیا،جس میں 135 یونیورسٹیوں کے10,500 سے زیادہ طلبہ شریک تھے۔ہواوے پاکستان کے سی ای او،مارک مینگ نے جیتنے والوں کو مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ" ہم جیتنے والی قومی ٹیموں اور اس کے ساتھ ہر اس فرد کو بھی مبارک باد دیتے ہیں جو اس سال کے مقابلے میں شریک ہوئے۔

ایسی بھرپور شرکت ڈیجیٹل سلوشنز استعمال کرتے ہوئے  پاکستانی طلبہ کی اجتماعی جدت اور تخلیقی صلاحیتوں کی بے پناہ استعداد کی عکاسی کرتی ہے"۔

مزید :

کامرس -