گاڑی کی چابیاں یا موبائل فون کہاں رکھا تھا؟ آپ کے ذہن کو یہ یاد کیسے رہتا ہے؟ سائنسدانوں نے معلوم کرلیا

گاڑی کی چابیاں یا موبائل فون کہاں رکھا تھا؟ آپ کے ذہن کو یہ یاد کیسے رہتا ہے؟ ...
گاڑی کی چابیاں یا موبائل فون کہاں رکھا تھا؟ آپ کے ذہن کو یہ یاد کیسے رہتا ہے؟ سائنسدانوں نے معلوم کرلیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ہم نے اپنی گاڑی کی چابی یا موبائل فون وغیرہ کہاں رکھا تھا؟ ہمارے دماغ کو یہ چیزیں کیسے یاد رہتی ہیں؟ سائنسدانوں نے نئی تحقیق میں اس سوال کا جواب معلوم کر لیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق یونیورسٹی آف ڈورہیم کے سائنسدانوں نے اس تحقیق میں دماغ کے خلیوں کی ایک نئی قسم دریافت کی ہے جو مختلف چیزوں کے بارے میں یاد رکھنے کا کام کرتے ہیں۔ ان خلیوں کو ’ویکٹر ٹریس سیلز‘ کہا جاتا ہے جن کی بدولت ہم اپنی ذاتی اشیاءگھڑی، موبائل فون اور چابی وغیرہ کے بارے میں یاد رکھتے ہیں کہ وہ کہاں رکھی تھی۔

رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں کی یہ تحقیق دماغ کے اندرونی جی پی ایس سسٹم کے متعلق ہونے والی نوبل انعام یافتہ ریسرچ کی بنیاد پر کی گئی ہے۔ اس تحقیق میں بتایا گیا تھا کہ دماغ کے جی پی ایس کی طرح کے خلیے ہیں جو ان جگہوں کو ایک نقشے کی صورت میں محفوظ کرتے ہیں جہاں ہم جاتے ہیں۔ تاہم یہ نئے دریافت ہونے والے ویکٹر ٹریس خلیے ہمیں چیزوں کو پہچاننے اور انہیں یاد رکھنے کی صلاحیت دیتے ہیں۔ تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر کولنز لیور کا کہنا تھا کہ اس تحقیق سے ہمیں یہ سمجھنے میں بھی مدد مل سکتی ہے کہ ڈیمینشا کے مریضوں کو یادداشت کا مسئلہ کیوں لاحق ہوتا ہے۔ اس کے لیے ہمیں مزید تحقیق کی ضرورت ہو گی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -