اپنے نام کی وجہ سے 8 ماہ جیل میں گزارنے والا شہری

اپنے نام کی وجہ سے 8 ماہ جیل میں گزارنے والا شہری
اپنے نام کی وجہ سے 8 ماہ جیل میں گزارنے والا شہری

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) سرکاری و قانونی معاملات میں نام وغیرہ کی معمولی سی غلطی بھی بسااوقات انسان کو بڑی مصیبت سے دوچار کر سکتی ہے۔ اب اس بھارتی شہری ہی کو دیکھ لیں جس کی ضمات کے حکم نامے پر اس کا نام غلط لکھے جانے کی وجہ سے اسے مزید 8ماہ جیل میں گزارنے پڑ گئے۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق اس ملزم کا نام ونود کمار بروار تھا۔ تاہم عدالت حکم نامے پر اس کا درمیانی نام نہیں لکھا گیا بلکہ اس کی بجائے اسے صرف ’ونود بروار‘ لکھ دیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق عدالتی عملے کی اس معمولی سی غلطی کی وجہ سے جیل سپرنٹنڈنٹ نے اسے غیرقانونی طور پر 8ماہ تک جیل میں قید رکھا۔ ونود نے 9اپریل کو ہائی کورٹ میں ضمانت کی درخواست دی تھی جو منظور کر لی گئی لیکن جیل حکام نے اسے رہا کرنے سے انکار کر دیا کیونکہ اس عدالت آرڈر پر اس کا نام غلط تھا۔ اب جا کر ونود نے آرڈر میں اپنا نام درست کرانے کے لیے دوبارہ عدالت سے رجوع کیا تب جا کر یہ بات عدالت نے نوٹس میں آئی اور اس نے جیل سپرنٹنڈنٹ کو طلب کر لیا اور ایک بار پھر ونود کی رہائی کا آرڈر جاری کر دیا جس پر اسے گزشتہ دنوں بالآخر رہائی مل گئی۔ 

مزید :

ڈیلی بائیٹس -