نوعمر لڑکی کو اس کی اپنی بہن نے ہی جسم فروشی پر مجبو رکردیا

نوعمر لڑکی کو اس کی اپنی بہن نے ہی جسم فروشی پر مجبو رکردیا
نوعمر لڑکی کو اس کی اپنی بہن نے ہی جسم فروشی پر مجبو رکردیا

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں ایک نوعمر لڑکی کو اس کی اپنی ہی بہن نے جسم فروشی پر مجبور کر دیا۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق یہ واقعہ بھارتی ریاست مدھیاپردیش کے شہر بھوپال میں پیش آیا ہے جہاں 15سالہ متاثرہ لڑکی کو اس کی 20سالہ بہن نے منشیات کا عادی بنایا اور اس سے جسم فروشی کروانے لگی۔جب لڑکی منشیات کی عادی ہو گئی تو اس کی حالت دیکھ کر ماں کو اس کی لت کے بارے میں علم ہوا۔

رپورٹ کے مطابق لڑکی کی ماں اسے نشہ چھڑوانے کے لیے ایک شیلٹر لے گئی جہاں لڑکی نے ڈاکٹروں کو اصل کہانی سنائی اور تب اس کی ماں کو بھی حقیقت معلوم ہوئی کہ اس کی بڑی بیٹی نے کس طرح اپنی چھوٹی بہن کی زندگی تباہ کر دی تھی۔ شیلٹر کی انتظامیہ نے یہ معاملہ پولیس کے حوالے کر دیا۔ لڑکی نے پولیس کو بتایا کہ ”اس وقت میری عمر 13سال تھی جب پہلی بار میری بہن نے مجھے منشیات دیں اور مجھ سے جسم فروشی کروائی۔ وہ مجھے منشیات استعمال کرواتی اور مختلف جگہوں پر گاہکوں کے پاس لے جاتی۔ میرے ایک کزن کو اس بارے علم ہوا تو اس نے بھی میری مدد کرنے کی بجائے میرے ساتھ جنسی زیادتی کر ڈالی اور خاموش ہو گیا۔ میری ماں کو کچھ پتہ نہیں تھا کہ میری بڑی بہن میرے ساتھ کیا کر رہی ہے۔“پولیس نے متاثرہ لڑکی کی درخواست پر اس کی بڑی بہن سمیت 7لوگوں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے اور ملزمہ کو گرفتار بھی کر لیا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -