اسلام آباد میں مندر کی تعمیر کا معاملہ، حکومت نے اپنا فیصلہ سنادیا

اسلام آباد میں مندر کی تعمیر کا معاملہ، حکومت نے اپنا فیصلہ سنادیا
اسلام آباد میں مندر کی تعمیر کا معاملہ، حکومت نے اپنا فیصلہ سنادیا

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) حکومت نے اسلام آباد میں مندر کی تعمیر کی اجازت دے دی۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق کیپیٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی طرف سے ہندومندر کی تعمیر کے ساتھ ساتھ سیکٹر ایچ 9/2میں ہندوکمیونٹی کے لیے ایک شمشان گھاٹ کی بھی اجازت دے دی گئی ہے جس کی بیرونی دیوار اس اجازت نامے کے بعد تعمیر کی جائے گی۔ 

رپورٹ کے مطابق چند ماہ قبل اسلام آباد میں ہندومندر کی تعمیر شروع ہوئی تھی تاہم اس پر ایک تنازع کھڑا ہو گیا جس پر تعمیر روک دی گئی۔ وفاقی وزیرمذہبی امور پیر نورالحق قادری نے یہ معاملہ اسلامی نظریاتی کونسل کے سپرد کر دیا ۔ اکتوبر میں کونسل نے کہہ دیا تھا کہ اسلام آباد میں مندر تعمیر کرنے میں کوئی آئینی یا شرعی رکاوٹ نہیں ہے اورپاکستان کے ہندوﺅں کودیگر اقلیتوں کی طرح اپنی مذہبی عبادت گاہیں تعمیر کرنے کا حق حاصل ہے۔ اسلامی نظریاتی کونسل کی اس ہدایت کو مدنظر رکھتے ہوئے حکومت نے اب مندر تعمیر کرنے کی اجازت دے دی ہے۔ واضح رہے کہ منصوبہ بندی کے مطابق اسلام آباد میں یہ کرشنا مندر 20ہزار مربع فٹ رقبے پر ایچ 9میں تعمیر کیا جا رہا ہے۔ 

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -