15سال قبل 7سال کی عمر میں اغواءکے مقدمہ میں ملوث ملزمہ بری

15سال قبل 7سال کی عمر میں اغواءکے مقدمہ میں ملوث ملزمہ بری

لاہور(نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج ندیم انصاری نے پولیس کی جانب سے 15سال قبل 7سال کی عمر میں اغواءکے مقدمہ میں ملوث کی جانے والی 22سالہ ملزمہ راشدہ کو بری کرنے کا حکم دے دیا ہے۔استغاثہ کے مطابق گرین ٹاﺅن کے رہائشی فلک شیر نے 1999ءمیں تھانہ گرین ٹاﺅن میں مقدمہ درج کرایا کہ اسکی بیوی زرینہ کو اسکے آشنا اشرف نے اغوا کیا ہے اور اسکی ڈیڑھ سالہ بچی فاطمہ بھی ساتھ لے گیا ہے۔ جس کے بعد تھانہ گرین ٹاﺅن پولیس نے اشرف ، اسکی 7 سالہ بہن راشدہ ، زرینہ سمیت 7 افراد کیخلاف مقدمہ درج کر لیا ۔بعدازاں پولیس کی جانب سے اکرم وغیرہ 4 ملزمان کو گرفتار کر کے چالان فاضل عدالت میں پیش کر دیا گیا جبکہ اشرف ، زرینہ اور راشدہ کو اشتہاری قرار دے دیا گیاتھا۔ اسی دوران اشرف کا انتقال ہو گیا اور پولیس اشتہاریوں کو ڈھونڈتی رہی اور آخر کار پولیس نے 7 سالہ اشتہاری ملزمہ راشدہ کو جو اس وقت 22 سال کی ہو چکی ہے کو گرفتار کر نے کے بعد تفتیش مکمل کرکے چالان عدالت میں بجھوا دیا تھا ۔گزشتہ روز فاضل جج نے سماعت کے بعد مذکورہ بالا حکم جاری کردیا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4