دس سالوں میں دہشت گردی کے خلاف جنگ کے لئے کتنی رقم مختص کی اور کتنے پیسے خرچ ہوئے ؟وزارت خزانہ نے تمام تفصیلات سینیٹ میں پیش کر دیں

دس سالوں میں دہشت گردی کے خلاف جنگ کے لئے کتنی رقم مختص کی اور کتنے پیسے خرچ ...
دس سالوں میں دہشت گردی کے خلاف جنگ کے لئے کتنی رقم مختص کی اور کتنے پیسے خرچ ہوئے ؟وزارت خزانہ نے تمام تفصیلات سینیٹ میں پیش کر دیں

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)دہشتگردی کے خلاف جنگ میں اخراجات کی 10 سال کی تفصیلات سینیٹ میں پیش کر دی گئیں۔

 نجی ٹی وی کے مطابق وزارت خزانہ کی جانب سے پیش کی گئی تفصیلات میں کہا گیا ہے کہ دہشتگردی کے خلاف جنگ کے لئے 152 ارب 92 کروڑ روپے مختص کیے گئے ، دہشتگردی کے خلاف جنگ پر 297 ارب 25 کروڑ روپے خرچ ہوئے ، وزارت خزانہ کے مطابق ضرب عضب کے آئی ڈی پیز کے لئے ایک ارب روپے مختص کیے گئے ۔ سپیشل سیکیورٹی ڈویژن کے لئے 33 ارب 43 کروڑ روپے مختص کیے گئے ،انٹرنل سیکیورٹی ڈیوٹی الاؤنس کے لئے 32 ارب 35 کروڑ روپے مختص کیے گئے ، پاک بحریہ کے لئے 15 ارب روپے مختص ، سوات آپریشن کے لئے 4 ارب روپے مختص کیے گئے ،آپریشن راہ راست اور راہ نجات کے لئے 9 ارب 32 کروڑ روپے مختص کیے گئے ۔

وزارت خزانہ کی جانب سے سینیٹ میں فراہم کردہ تفصیلات کے مطابق آپریشن ضرب عضب کے لئے 15 ارپ روپے محتص کیے گئے ، پاک فضاءئیہ کے لئے 12 ارب روپے مختص کیے گئے ، وزیر اعظم کے دفاعی سروسز کے لئے خصوصی پیکج کے تحت 11 ارب روپے مختص کیے ، شہدائے اے پی ایس کے لئے 19 کروڑ روپے مختص کیے گئے ، پاک افغان سرحد پر باڑ لگانے کے لئے 30 ارب روپے مختص کیے گئے ، امریکا نے 10 سال کے دوران نارکوٹکس کنٹرول سے متعلق 132 ملین ڈالر دیئے ۔ نارکوٹکس کنٹرول سے متعلق امریکا سے 111 ملین ڈالر وصول کیے ۔ نارکوٹس کنٹرول سے متعلق 505 ملین ڈالرز منظور کیے گئے تھے ۔ وزارت خزانہ کی سینیٹ میں فراہم کردہ تفصیلات کے مطابق فاٹا متاثرین کی آباد کاری کے لئے فاٹا سیکرٹریٹ کو 45 ارب روپے دیئے گئے ۔رینجرز، ایف سی اور فرنٹیئر کانسٹیبلری کو 67 ارب 58 کروڑ روپے دیئے گئے ۔ پنجاب رینجرز کو 8 ارب40 کروڑ ، سندھ رینجرز کو 2 ارب 12 کروڑ دیئے گئے ۔

مزید : قومی