آئین میں تمام اداروں کی حدود متعین ہے،محمود اچکزئی

آئین میں تمام اداروں کی حدود متعین ہے،محمود اچکزئی

اسلام آباد (آئی این پی) پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ اور رکن قومی اسمبلی محمود خان اچکزئی نے کہاہے کہ اگر پارلیمنٹ اپنی طاقت سے کسی بھی جرنیل کے تمام دس سال کے گناہوں کومعاف کرسکتی ہے تو یہ پارلیمنٹ کچھ بھی کرسکتی ہے،تین قسم کے لوگ آئین کے تحفظ کی قسم کھاتے ہیں ایک فوجی‘ جج اور پارلیمنٹرین ، ان میں سے جو بھی آئین کی حدود سے تجاوز کرے گا وہ قابل سزا ہوگا، پاکستان ایک رضا کارانہ فیڈریشن ہے ہم سب اکٹھے اس فیڈریشن میں شامل ہوئے ہیں آئین کا ایک ایک حرف مقدس اور مقدم اس لئے ہے کہ اسی پر فیڈریشن چلنے پر مبنی ہے۔ بدھ کو الیکشن کمیشن کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے محمود خان اچکزئی نے کہا کہ پاکستان ایک رضا کارانہ فیڈریشن ہے ہم سب اکٹھے اس فیڈریشن میں شامل ہوئے ہیں آئین کا ایک ایک حرف مقدس اور مقدم اس لئے ہے کہ اسی پر فیڈریشن چلنے پر مبنی ہے۔ آئین میں تمام اداروں کی حدود متعین ہے۔ آئین عوام بناتے ہیں عوام کے منتخب نمائندے بناتے ہیں اور اپنی ضروریات کے مطابق بناتے ہیں۔ تشریح عدلیہ کرتی ہے فیصلے عوام کرتی ہے۔ یہ عوام کا بنایا ہوا آئین ہے اس میں زبر‘ زیر ‘ پیش کا اضافہ یا کمی صرف منتخب پارلیمنٹ کا کام ہے۔ نمائندوں کے علاوہ کوئی اسے ہاتھ نہیں لگا سکتا۔

محمود اچکزئی

مزید : علاقائی