نواز شریف مسلم لیگ ن کے سپریم لیڈر تھے اور رہیں گے: احسن اقبال

نواز شریف مسلم لیگ ن کے سپریم لیڈر تھے اور رہیں گے: احسن اقبال

اسلام آباد (آن لائن)وفاقی وزیر داخلہ اور مسلم لیگ ن کے قائم مقام جنرل سیکرٹری احسن اقبال نے کہا ہے نواز شریف مسلم لیگ ن کے سپریم لیڈر تھے اور رہیں گے ان کی قیادت عہدے کی محتاج نہیں۔ پارٹی اجلاس میں صدر کا انتخاب کرلیا جائے گا۔ سپریم کورٹ کا فیصلہ جمہو ری عمل کیلئے دھچکا ، فیصلے سے کشمکش کی صورتحال پیدا ہوگی جبکہ مسلسل عمران خان کی جانب سے تاثر دیا جارہا ہے سپریم کورٹ ان کے تابع ہے یہ تاثر ملک اور عدلیہ کیلئے نقصان دہ ہے۔ نجی ٹی وی سے گفتگو میں انکا مزید کہنا تھا سپریم کورٹ کا فیصلہ افسوسناک ہے ،جمہوری جماعت کا جمہوری حق ہے وہ اپنے سربراہ کا انتخاب کرسکے جس قانون کو عدالت نے فیلڈ مارشل ایوب خان اور جنرل (ر) پرویز مشرف نے اپنے پسندیدہ پارٹی سربراہان کو مقرر کرنے کیلئے بنایا تھا۔ قومی اسمبلی نے خالص آئین کو بحال کیا تھا۔ کوئی شک نہیں جمہوری عمل میں کشمکش کی صو ر تحا ل پیدا ہوگی۔ بیرونی خطرات درپیش ہیں اس وقت ایسے حالات پاکستان کیلئے سازگار نہیں ہیں۔ عمران خان مسلسل یہ تاثر دینے کی کو شش کررہے ہیں سپریم کورٹ ان کے تابع ہے یا وہ سپریم کورٹ کے فیصلوں پر حاوی ہیں۔ یہ پاکستان کیساتھ مسلسل کھیل کھیلا جارہا ہے ۔ انصاف کے اعلیٰ ترین ادارے کی پوزیشن کو بھی کمپرومائز کیا جارہا ہے اور یہ تاثر پاکستان اور عدلیہ کے حق میں نہیں ہے۔ نواز شریف کو سابق صدر پرویز مشرف نے بھی پارٹی عہدے سے الگ کردیاتھا۔ پارٹی عہدے عوامی سطح پر حاصل ہونیوالی پذیرائی کے باعث حاصل ہوتے ہیں۔ مسلم لیگ ن کو کوئی فرق نہیں پڑے گا،پارٹی اجلاس میں نئے صدر کا انتخاب کیا جائے گا ۔

مزید : صفحہ آخر