اسلام آباد ہائیکورٹ، ختم نبوتؐ کے قانون میں ترمیم کے معاملے پر 4عدالتی معاونین مقرر

اسلام آباد ہائیکورٹ، ختم نبوتؐ کے قانون میں ترمیم کے معاملے پر 4عدالتی ...

اسلام آباد(این این آئی)ختم نبوت ؐحلف نامے سے متعلق الیکشن ایکٹ ترمیم کیخلاف دائر درخواست پر عدالت نے 4 مذہبی سکالرز کو عدالتی معاون مقرر کردیا۔جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے الیکشن ایکٹ 2017 میں ترمیم سے متعلق کیس کی سماعت کی، اس موقع پر عدالت نے قرار دیا کہ حلف نامے سے متعلق عدالتی معاونت کے لئے مذہبی اسکالرز کی رہنمائی لی جائے گی۔عدالت نے پروفیسر حسن مدنی، مفتی حسین بنوری، محسن نقوی اور ڈاکٹر ساجد الرحمان کو اپنا معاون مقرر کردیا جبکہ جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے کہا کہ حلف نامے میں ترمیم سے متعلق معاملے پر مذہبی اسکالرز معاونت کریں۔عدالت نے ڈپٹی اٹارنی جنرل ارشد کیانی کو ہدایت کی کہ چاروں مذہبی اسکالرز سے رابطہ کریں اور درخواست گزار کے وکیل حافظ عرفات کو دودن میں اپنے دلائل مکمل کرنے کی ہدایت کی۔ گزشتہ سماعت پر حکومت کی جانب سے راجہ ظفر الحق کمیٹی کی رپورٹ سربمہر لفافے میں پیش کیے جانے کے بعد عدالت نے قرار دیا تھا کہ کیس کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر کی جائے گی۔جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے اٹارنی جنرل ارشد کیانی کو مخاطب کرتے ہوئے ریمارکس دیے تھے کہ ختم نبوت کے معاملے پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائیگا ٗ آپ کو اس ایشو کی نزاکت کا احساس ہی نہیں ہے۔

مزید : صفحہ آخر