کبھی وزیر اعظم بننے کا شوقین نہیں رہا ، بنا تو کسی مقصد کیلئے بنوں گا : عمران خان

کبھی وزیر اعظم بننے کا شوقین نہیں رہا ، بنا تو کسی مقصد کیلئے بنوں گا : عمران ...

اسلام آباد(صباح نیوز)پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے سپریم کورٹ الیکشن ایکٹ203 مسترد نہ کرتی تو عدا لت کا اپنا وقار مجروح ہو جاتا ، عدالت لوگوں کو انصاف دے رہی ہے ،دو چیزوں کی وجہ سے پارلیمنٹ پر لعنت بھیجی ایک چور کو پارٹی صدر منتخب کرنے اور دوسرا ختم نبوتؐ کا حلف نامہ تبدیل کرنیوالوں پر لعنت بھیجی،نواز شریف نے تین سو ارب روپے چوری کا جواب دینا ہے، شہبا زشریف پر اربوں روپے کی کرپشن ہے مگر اب تک بچے ہوئے ہیں ،میں کبھی بھی وزیراعظم بننے کا شوقین نہیں تھا ہم اس ملک کو عظیم ملک بنانا چاہتے ہیں ۔بدھ کے روز نجی ٹی وی کو انٹرویومیں انکا مزید کہنا تھا پارلیمنٹ کرپٹ آدمی کا دفاع کر رہی ہے عوام کولوٹنے پر جیل جانیوالا ہیرو نہیں ہوتا نواز شریف عدالت کے جواب پوچھنے پر قطری خط لے آئے ،جمہوریت میں کرپٹ شخص پارٹی صدر نہیں بن سکتا کرپٹ آدمی کا صدر بننا آئین کی روح کیخلاف ہے مگر ن لیگ نے کرپٹ آدمی کو پارٹی صدر منتخب کیا ن لیگ جانتی ہے نواز شریف چور ہے ن لیگ نے جو قانون بنایا دنیا اسکا مذاق اڑا رہی ہے، نواز شریف کہتے ہیں عوام میرا احتساب کریں اگر عدالت نواز شریف کی پارٹی صدارت سے نااہلی کا فیصلہ نہ دیتی تو اس کا وقار عوام میں گر جانا تھا ۔اپنی شادی کے بارے میں سوال پر عمران خان نے کہا سب سے اہم چیز انسان کا کردار اور دوسرا ذہن ہوتا ہے ۔ شادی میں سب سے اہم کسی کی عزت ہوتی ہے ۔ علامہ اقبال ؒ اور قائد اعظمؒ لبرل انسان تھے لبرل آدمی کسی پر اپنی سوچ مسلط نہیں کرتا ، بشریٰ بیگم نے عمر بھر حجاب کیا وہ مجھ سے بہت آگے ہیں ۔ بشریٰ بی بی ایک صوفی بزرگ ہیں وہ 30سال سے صوفی ازم پڑھ رہی ہیں ، انکا قرآن پاک کا وسیع مطالعہ ہے پیری مریدی اور صوفی ازم میں فرق ہوتا ہے ۔ ناقدین اسلام کی تاریخ سے ناواقف ہیں ۔ میں بشریٰ بیگم سے 2سال پہلے ملا کامیاب انسان خود بنتا ہے کوئی انگلی پکڑ کر اس کو کامیاب نہیں بناتا،کیا بشریٰ سے ملنے سے پہلے میں کا میا ب انسان نہیں تھا؟جو آدمی کسی کا گھر توڑ کر اپنا گھر بساتا ہے اس پر اللہ کا عذاب آتا ہے، ہماری پارٹی کے تمام فیصلے مشاورت سے ہوتے ہیں ہما ری جمہوری پارٹی ہے ، اگر میں وزیراعظم بنوں گاتو ایک مقصد کیلئے بنوں گا۔ ہم کے پی کے میں تبدیلی لائے ہیں یہ باتیں پاگل پن ہیں کہ شادی کرواور وزیراعظم بن جاؤگے ۔ بشریٰ کی طلاق کا مجھ سے کوئی تعلق نہیں اس میں کوئی حقیقت نہیں میں نے کسی کا گھر اجاڑا ہے ۔ تحریک انصاف کا کوئی غلط کلچر نہیں جلسوں میں ترانے ہیں خواتین کا احترام ہوتا ہے ۔ شادی ایک ذاتی چیز ہے ۔ میری نیت صاف ہے اللہ نے نیت پر مجھے کامیاب بنانا ہے ۔

عمران خان

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے مسلم لیگ (ن) کی عدالت مخا لف سرگرمیوں کیخلاف اسلام آباد میں لوگوں کو اکٹھا کروں گا۔اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عمران خان نے کہا پاکستان میں آئین اور جمہوریت پر حملے ہورہے ہیں اور عوام کی عدالت کے نام پر لوگوں کو دھوکا دیا جارہا ہے، لیکن میں ثابت کروں گا قوم عدلیہ کیساتھ کھڑی ہے، اسلام آباد میں یہ بتانے کیلئے بھی شو کروں گا نواز شریف کو کیوں نکالا۔ ایم کیو ایم کے بانی الطاف حسین پر پابندی لگ چکی ہے اور نواز شریف اس کے قریب پہنچ چکے ہیں۔ حدیبیہ کیس میں نئے شواہد کیساتھ عدالت جائیں گے اور جب بھی یہ کیس سنا جائے گا تو شہباز شریف کا بھی مجھے کیوں نکالا جیسا حال ہوگا۔ قطری خط کے جھوٹ پر نواز شریف کو جیل بھیجنا چاہیے تھا کیونکہ کیس اسی وقت ختم ہوگیا تھا جب ٹرسٹ ڈیڈ بھی فراڈ تھی جو جعلسازی تھی اور اس کی بھی سزا ہے، حالانکہ شریف خاندان کو قطری خط، کیلبری فونٹ اور جعل سازی پر جیل ہونی چاہیے تھی۔نواز شریف سپریم کورٹ پر حملے کیلئے عوام کا سہارا لے رہا ہے، جتنے لوگ انہو ں نے جلسوں میں نکالے اس سے زیادہ لوگ اسلا م آباد میں اکٹھے کروں گا،چاہیں گے نگران سیٹ اپ میں ہم سے بھی مشاورت کی جا ئے، ملک میں طاقتور کیلئے ایک قانون ہے اور غریب مجرم جیل میں بند ہے، ادارے ٹھیک ہوتے تو نیب نواز شریف کو پکڑ چکا ہوتا۔ پانامہ میں 2فیز فلیٹس کیلئے پیسہ کہاں سے آیا؟ یہ بتانا نواز شر یف کی ذمہ داری تھی مگر وہ آج تک نہیں بتا سکے ،پاکستان کیساتھ وہ کیا جا رہا ہے جو دشمن بھی نہیں کر سکتا، ادارے تباہ ہوجائیں تو وہ تھرڈ ورلڈ ملک بن جاتا ہے، نواز شریف پیسہ لوٹ کر ملک سے باہر لے گئے، ایف بی آر ٹیکس چوری میں ان کی مدد کرتا ہے، سمدھی کو وزیرخزانہ بنا دیا جو منی لانڈرنگ میں مدد کرتا تھا، پاکستان کا وزیر خارجہ دبئی کی کمپنی سے تنخواہ لے رہا ہے، ایف بی آر، پولیس سب ان کی مدد کر رہے ہیں، ( ن ) لیگ اپنے وزیراعظم کی چوری چھپا رہی ہے، وزیراعظم خود وزیرخزانہ کو ملک سے باہر بھگاتا ہے،جبکہ خود ایل این جی میں پھنسا ہوا ہے، آ صف زرداری کے 6ارب روپے سوئس بینک میں پڑے تھے، عدالت زرداری کا پیسہ لانے کی بات کرتی تو نواز شریف خوش ہوتے تھے،اداروں پر حملے دنیا کی کسی جمہوریت میں نہیں ہوتے، نواز شریف کو پارلیمنٹ میں بھرپور طریقے سے بے نقاب کریں گے، ممبر سازی مہم کے دوران پورے ملک کا دورہ کروں گا، پاکستان کے عوام، عدلیہ اور آئین کیساتھ ہیں، ملک بھر کے دورے کر رہا ہوں،کارکنان سے خود ملاقات کروں گا، اسلام آباد میں پاور شو کروں گا اور بتاؤں گا انہیں کیوں نکالا، وزیراعظم عدالتی فیصلہ نہیں مانتا تو جیلوں میں موجود مجرم کیوں مانیں گے، واچ لسٹ میں ڈالنے کی کوشش ہماری خارجہ پالیسی کی ناکامی ہے، عابد باکسر نے خود کہا تھا میں ان کے کہنے پر لوگوں کو قتل کرتا تھا، عابد باکسر کہہ چکا ہے شریف خاندان کی اجازت کے بغیر کوئی مقابلہ نہیں کرتا تھا، ہمیں عابد باکسر کی جان کی فکر کرنی چاہیے، 2013ء کے الیکشن میں 22سیاسی جماعتوں نے کہا تھا دھاندلی ہوئی، الیکشن کمشنر اور نگران سیٹ اپ دو پارٹیوں کی مرضی سے لایا گیا تھا۔ نواز شر یف کو سڑکوں پر نکلنے کا موقع دیاگیا۔ پاکستان کی عدلیہ آج جہاں کھڑی ہے اس کے پیچھے جدوجہدہے اور ہم بھی اس جدوجہد میں شامل تھے ، نواز شریف 1998ء والی عدلیہ چاہتے ہیں جب سپریم کورٹ پر حملہ کرلیا، آرمی چیف واضح کہہ رہے ہیں آئین اور جمہوریت کیساتھ کھڑ ے ہیں۔

مزید : صفحہ اول