شیر گڑھ ، تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں ادویات ناپید ، مریض رل گئے

شیر گڑھ ، تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں ادویات ناپید ، مریض رل گئے

شیرگڑھ (نما ئندہ پاکستان) تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں ادویات نا پید ہووگئیں روزانہ سیکڑون کی تعداد میں لو گ او پی ڈی پر روز اپنے مر یض لا تے ہیں مگر ان ڈیو ٹی ڈاکٹر مریضوں کو ٹرخا کر رخصت کر تے ہیں اور امریضوں کے لو احیقین کو مر یض کلینک پرلا نے کا مشورہ دتے ہیں لیبارٹری اور دیگر کا ونٹروں پر ڈیو ٹی دینے اکثر چھو ٹے بچے پا ئے جا تے ہیں ایم ایس اپنے دفتر سے اکثرغائب رہتا ہے جنریٹر اکثر بند رہتا ہے جس کے با عث لو گ اپنے مریضوں کو ایکسرے ٹسٹ الٹرا سانڈ ایس ای جی کرانے کیلئے ہسپتا ل سے با ہر پر ائیویٹ لیبا رٹریوں اور کلینکوں پر لے جا نے پر مجبور ہیں کو ئی پر سان حال نہیں تخت بھا ئی میں ڈی سی مردان کی کھلی کچہری میں بھی کھلی کچہری کے شرکا ء نے یہ شکا یت کی تھی تفصیلا ت کے مطا بق تحصیل تخت بھا ئی کے سب سے بڑا اور واحد تحصیل ہیڈ کو ارٹر ہسپتال بر ائے نام ہسپتال ہوکررہ گیا ہسپتال پر پو رے علاقے کے با شندوں کی صحت کا دار ومدار ہے مگر ہر صبح آس پا س کے لوگ اپنے مر یض ہسپتال لا تے ہیں مگر اکثر ڈاکٹر غیر حا ضر رہتے ہیں اور جو ڈاکٹر ڈیو ٹی پر حاضر ہو تے ہیں دن بھر خوش گپیوں میں مصروف رہتے ہیں ہسپتال میں ادویات کا شدید ترین فقدان ہے اور غریب لو گ صرف ڈاکٹروں سے نسخہ جات لکھواتے ہیں اور ادویانہ ملنے پرہسپتال سے مایوس واپس لو ٹتے ہیں لیبا رٹری وغیرہ کے کا ونٹروں پر ڈیو ٹی دینے اکثر چھوٹے بچے بیٹھے رہتے ہیں ہسپتال کے جنریٹر کی بندش کے با عث اکثر وبشتر لو گ ایکسرے ٹسٹوں ایس ای جی اور الٹر ساونڈ کیلئے مریض پر ائیویٹ لیبا رٹریوں اور کلینکوں پر لے جانے پر مجبو ر ہیں تخت بھا ئی کے مقام پر ڈی سی مردان کی کھلی کچہری میں بھی لوگوں نے اس ہسپتال کی کا رگزاری کے خلاف شکا یت کی تھی مگر اس پر بھی ہسپتال کی کا ر کر دگی میں کو ئی بہتری نہیں آئی علا قہ کے باشندوں نے صوبائی وزیر صحت سے ایکشن لینے کا پر زور مطا لبہ کیا ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر