قوموں کا مستقبل انکے تعلیم یافتہ نوجوانوں سے وابستہ ہوتاہے،ڈاکٹر کلیم عباسی

قوموں کا مستقبل انکے تعلیم یافتہ نوجوانوں سے وابستہ ہوتاہے،ڈاکٹر کلیم عباسی

مظفرآباد(بیورورپورٹ)آزاد جموں و کشمیر یونیورسٹی ترجمان کے مطا بق آزاد کشمیر یونیورسٹی کے زیر اہتمام ایک روزہ سیمینا ر بعنوان کشمیر کی مو جو دہ صورتحال اور مطا لعہ کشمیر کی اہمیت منعقد ہو ا۔ جس کے مہمان خصوصی پر وفیسر ڈا کٹر محمد کلیم عبا سی ، وا ئس چانسلر آزاد جموں و کشمیر یونیورسٹی تھے ۔ اس کے علاوہ محمد اکرم سہیل ،ریٹا ئر ڈ ایڈ یشنل چیف سیکر ٹری ، پروفیسر ڈا کٹر محمد قیوم ، ڈین فیکلٹی آف سائنسز، چو ہد ری شفقت علی ، ڈا ئر یکٹر جنر ل کشمیر کلچر ل اکیڈ می ، کوارڈینٹر ادا رہ مطا لعہ کشمیرعنبرین خواجہ،کشمیر لبریشن سیل سے بابر بشیر جبکہ کشمیر اسٹیڈیز فورم کے صدر سردار مدثر خان نے بھی خطاب کیا،وا ئس چانسلر آزاد جموں و کشمیر یونیورسٹی ، پروفیسر ڈاکٹر محمد کلیم عبا سی نے سیمینار سے خطا ب کر تے ہو ئے بتا یا کہ آزاد جموں وکشمیر یونیورسٹی میں قا ئم شدہ ادارہ مطا لعہ کشمیر تحر یک آزاد ی کشمیر کے لیئے ایک مثبت اور مو ثر کر دار اداء کر نے کی صلا حیت رکھتا ہے ، انہوں نے طلبہ کو مخا طب کر تے ہوئے بتا یا کہ قوموں کا مستقبل ہمیشہ ان کی نو جوان تعلیم یا فتہ طلبا ء و طالبات سے وابستہ ہو تا ہے۔آزاد جموں وکشمیر میں اس وقت 28شعبہ جا ت ہیں اگر طلبہ سو شل میڈ یا پر بھار ت کے خلاف تحر یک چلا ئیں تو ان کے اوسان خطاء ہو جا ئیں گے۔ جامعا ت میں تحقیقی ادا رہ جات مو جو د ہیں طلبہ اپنی تو جہ تعلیم و تر بیت پر مر کو ز رکھیں اور محنت کر یں۔ وا ئس چانسلر جامعہ کشمیر نے شعبہ اُردو اور کشمیر سڈیز میں فوری طور پر ایم فل پروگرام کے آغا ز کو اعلا ن کر دیا۔جامعہ کشمیر میں مکا نیت کی شد ید کمی ہے ۔ جس ادا رے میں گڈ گو رنس ، ڈسپلن نہیں وہ کبھی ترقی نہیں کر سکتا ۔ چھتر کلاس کیمپس کو فو ری مکمل کر یں گے تب ہی مسا ئل مکا نیت کے مسا ئل حل ہو سکیں گے۔ میں وا ئس چانسلر نہیں میں طالبعلم ہوں۔ سعو دی فنڈ فار ڈویلپمنٹ کے چیف انجینئر نے 8ارب دینے کا اعلا ن کیا ہے ۔02ارب روپے کا ایک اور پرا جیکٹ بھی جلد جامعہ کشمیر کو مل جا ئے گا۔ اس کے علاو ہ سپیکر آزاد کشمیر اسمبلی کے تعا ون سے نیلم کیمپس کے لیئے 200کنال الاٹ ہو گئی ۔ ہا ئر ایجوکیشن کمیشن نے جامعہ کشمیر کے لیئے 90کر وڑ دینے کا وعدہ کیا ہے۔ انشا اللہ نیلم کیمپس کو ما ڈ ل کیمپس بنا ئیں گے ا ادارہ مطالعہ کشمیر کے طلبا ء و طالبات مسئلہ کشمیر پر امن حل کے لیئے اپنی تحقیقی صلا حیتوں کو بر ؤ ے کا ر لا تے ہو ئے اس کے پر امن حل کے لیئے سو شل میڈ یا و دیگر سفارتی ذرائع سے بین الا قوامی فورم اقوام متحدہ سلامتی کو نسل جیسے ادا رہ جا ت کو بھا رتی مظا لم جبر و تشدد اور مقبو ضہ وا دی میں بھا رتی افواج کی جا رحیت کے زریعے حقو ق انسا نی کی پا ما لی کی نسبت آگاہ کر نے میں اپنا عملی کردار ادا ء کر یں۔وا ئس چانسلر نے مو جو دہ حا لات میں کوا لٹی آف ایجوکیشن ، تحقیق / ریسرچ میں یونیورسٹی کو درپیش مکانیت کی کمی کے حل کے لیئے کنگ عبد اللہ کیمپس کی فوری تعمیر کو نا گزیر قرار دیا اورطلبہ کو یقین دلایا کہ جلد ہی مار چ 2019میں کنگ عبداللہ کیمپس کی تعمیر مکمل ہو نے پر طلبہ کو ریسر چ ، تد ریس کے لیئے بہتر ین ما حول فراہم کیا جا ئے گا۔ ریٹا ئر ڈ ایڈ یشنل چیف سیکر ٹر ی ، محمد اکر م سہیل نے سیمینار سے خطا ب کر تے ہو ئے طلبہ کو تحر یک آزاد ی کشمیر کے حوالہ سے مختلف پہلو ں کا ذکر کر تے ہو ئے ، طلبہ ، سو ل سو سا ئٹی اور میڈ یا کی توجہ اس اہم نقطہ کی طر ف مبذ و ل کر وائی کہ 1947سے لیکر تا حال کشمیر قوم کشمیر کی آزاد ی کے لیئے لا کھوں انسا نی جا نوں کا نذرانہ پیش کر چکی ہے جبکہ اس وقت مقبو ضہ وا دی میں تقریباً چھ لا کھ سے زا ئد بھا رتی مصلہ فوج نہتے کشمیر یوں پر جبر و تشد د اور ظلم کی ہر روز نئی داستان رقم کی جا رہی ہے ، اور بھارتی مظالم جبر و تشدد کو بین الاقوامی سطح پر روشنا س کر وانے لیئے مختلف حیثیتوں میں وفود بھی بیر ون ملک کشمیر کمیٹی و دیگر فورم کے توسط سے دورہ جات کر چکے ہیں ۔ اس کے با وجود بین الاقوامی دنیا کو ہم مسئلہ کشمیر کے حوالہ سے اپنے جا ئز مو قف کو سمجھا نے میں کا میاب نہیں ہو سکے ۔ اس سوال کے جو اب کے لیئے نئی نسل بالخصو ص ادارہ مطا لعہ کشمیر کے سکالر طلبہ اور فیکلٹی ممبران کو عملی طو رپر تحقیق کی ضر ورت ہے با لخصوص ادارہ مطا لعہ کشمیر میں زیر تعلیم طلبہ اپنی مخفی صلا حیتوں کو اجا گر کر تے ہو ئے سو شل میڈ یا و دیگر ذارائع کو بر وئے کا رلا تے ہو ئے مسئلہ کشمیر کو بین الا قوامی سطح پر اجا گر کر نے لیئے سفارتکا ری کا کرداراداء کر نے کے ساتھ اپنے آپ سے اس سوال کا انفرادی و اجتما عی طو رپر جو اب حاصل کر یں کہ 1947سے تا حال مسئلہ کشمیر کے حوالہ سے ہمیں اپنے رویے اور اپنی خا رجہ پا لیسی کے حوالہ سے سیا سی و قومی سطح پر کہا ں کہاں غلطیاں سرزد ہو ئیں اور ہمیں با لخصوص جنو بی ایشاء میں پیدا ہو نے والے حا لا ت اور پا کستان کے حما یتی ہمسا یہ مما لک کے مفا دات کو مد نظر رکھتے ہو ئے خا رجہ پا لیسی کی جا نب تو جہ دینی ہو گی کیو نکہ ایک مستحکم مضبو ط اور مالی و انتظامی اعتبا ر سے خوشحال پا کستان ہی آزادی کشمیر کی کا میابی کا ضا من ہو سکتا ہے ۔سمینار سے خطاب میں شفقت علی چوہدری، ڈا ئر یکٹر جنر ل کشمیر کلچر ل اکیڈ می ، کوارڈینٹر ادا رہ مطا لعہ کشمیرعنبرین خواجہ،کشمیر لبریشن سیل سے بابر بشیر جبکہ کشمیر اسٹیڈیز فورم کے صدر سردار مدثر خان نے مسئلہ کشمیر کے حل کے حوالے سے خطاب کیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر