جرمنی سے ملک بدری کا خوف، پاکستانی دوسری منزل کی کھڑکی سے کودکرزخمی

جرمنی سے ملک بدری کا خوف، پاکستانی دوسری منزل کی کھڑکی سے کودکرزخمی

برلن(این این آئی)جرمن صوبے ہیسے میں پناہ گزینوں کے ایک مرکز میں رہائش پذیر 35سالہ پاکستانی تارک وطن کو شبہ ہوا کہ پولیس اسے گرفتار کر کے ملک بدر کرنے آئی ہے۔ ملک بدری سے بچنے کے لیے وہ دوسری منزل سے کود کر شدید زخمی ہو گیا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یہ واقعہ جرمن صوبے ہیسے کے شہر روسلہائیم میں تارکین وطن کے لیے مختص کردہ ایک رہائش گاہ میں روز پیش آیا۔ بظاہر اس مرکز میں مقیم پینتیس سالہ پاکستانی تارک وطن نے رہائش گاہ پر پولیس کو دیکھا تو اسے خدشہ ہوا کہ وہ اسے گرفتار کر کے ملک بدر کرنے کے لیے وہاں آئی ہے۔اسی خدشے کے باعث یہ پاکستانی تارک وطن اپنے کمرے کی کھڑکی سے نیچے کود گیا۔ دوسری منزل سے کودنے کے باعث وہ شدید زخمی ہو گیا اور اسے فوری طور پر ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔دوسری جانب پولیس کا کہناتھا کہ وہ مذکورہ تارک وطن کو گرفتار کرنے نہیں آئی تھی بلکہ اسے ایک دوسرے پاکستانی پناہ گزین کی تلاش تھی۔ دوسرا تارک وطن پناہ گزینوں کے لیے مختص کردہ ایک اور رہائش گاہ میں مقیم تھا اور اسے ملک بدری کے لیے گرفتار کیا جانا تھا۔بعد ازاں پولیس نے اْس دوسرے پاکستانی تارک وطن کو روسلہائیم ہی میں قائم پناہ گزینوں کے ایک مرکز سے گرفتار کر لیا۔

جرمنی

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر