سویڈن پاکستان میں خطیر سرمایہ کاری کرنے میں دلچسپی لے رہا ہے : گورنر سندھ

سویڈن پاکستان میں خطیر سرمایہ کاری کرنے میں دلچسپی لے رہا ہے : گورنر سندھ

کراچی ( اسٹاف رپورٹر)گورنر سندھ محمد زبیر نے کہا ہے کہ پاکستان کی ترقی و خوشحالی میں دوست ممالک اہم کردا ر ادا کرر ہے ہیں ، چین کے بعد سویڈن بھی پاکستان میں خطیر سرمایہ کاری کرنے میں بھرپور دلچسپی لے رہا ہے، سوئیڈش کمپنیاں ابتدا میں 500 ملین ڈالرز سے سرمایہ کاری کا آغاز کررہی ہیں جس کے بعد اس میں تسلسل سے اضافہ ہو تا رہے گا ، سوئڈش سرمایہ کاری سے خوشحالی اور تیز ترین ترقی یقینی ہے ، مضبوط معیشت کے قیام سے عالمی معاشی نقشہ پر پاکستان کو نمایاں مقام حاصل ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ امن و امان کے قیام ، بجلی بحران کے خاتمہ اور قومی معیشت کے استحکام سے پاکستان خوشحالی و ترقی کے نئے سفر پر گامزن ہورہا ہے ، ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاروں کے اعتماد میں اضافہ کے باعث سرمایہ کاری ، صنعتی فعالیت ، تجارتی حجم اور کاروباری سرگرمیوں میں تسلسل سے اضافہ ہو رہا ہے ، پاک سوئڈش دو طرفہ تعلقات کی تاریخ میں پہلی مرتبہ سوئڈش سرمایہ کار پاکستان میں ایک ارب ڈالرز سے زائد کی سرمایہ کاری میں بھرپور دلچسپی لے رہا ہے جو کہ خوش آئند اور حوصلہ افزا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گورنر ہاؤس میں سوئڈش سرمایہ کاروں کو دیئے گئے ایک استقبالیہ سے خطاب میں کیا ۔اس موقع پر پاکستان میں سویڈن کی سفیرانگرڈ جوہانسن Ms.Ingrid Johansson ، Tundra Founder کے بانی و چیف ایگزیکٹیو آفیسر جون شیبرMr.Jon Scheiber ، شمون طارق اور محمد کامران بھی موجود تھے۔ گورنر سندھ نے کہا کہ قومی معیشت کی بہتری ، ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاری میں تسلسل سے اضافہ اور نئی سرمایہ کاری کے حوالہ سے کہا کہ قومی معیشت بہتری کی جانب گامزن ہے ، ہر شعبہ میں مثبت اثرات واضح دیکھے جا سکتے ہیں ، جی ڈی پی کی شرح نمو بڑھ رہی ہے ، پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں مسلسل مثبت رجحان دیکھا جا رہا ہے ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ پاکستان اسٹاک ایکس چینج نے50 ہزار کاہدف عبور کیا ، عالمی سطح پر ہونے والی تبدیلیوں کے باعث دنیا بھر کے اسٹاک ایکس چینج میں زبردست مندی دیکھی گئی لیکن پاکستان اسٹاک ایکس چینج مثبت رہا جو کہ خوش آئند ہے اس وقت بھی 42 ہزار سے زائد پر ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاک سویڈن دو طرفہ تعلقات کئی دہائیوں پر مشتمل ہیں دوطرفہ سرمایہ کاری ، تجارتی حجم میں اضافہ ، وفود کے تبادلوں اور کاروباری سرگرمیوں کے بڑھنے سے دو طرفہ مفادات مزید مستحکم ہو ئے ہیں ، سوئڈش سرمایہ کار پاکستان میں 2011 ء سے سرمایہ کاری کررہے ہیں ، یہ وہ وقت تھا جب غیر ملکی سرمایہ کار یہاں سرمایہ کاری کرنے سے ہچکچاتے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے جب اقتدار سنبھالا اس وقت پاکستان میں امن و امان کی حالت بہت خراب اور بجلی بحران سنگین صورتحال اختیا ر کرچکا تھا جبکہ قومی معیشت بھی بری طرح سے متاثر تھی لیکن موجودہ حکومت نے قلیل ، وسط اور طویل مدتی منصوبے تشکیل دیئے ، آج امن و امان بہتر ، بجلی بحران کا خاتمہ اور قومی معیشت مستحکم ہو چکی ہے ، ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاروں کے اعتماد میں اضافہ سے سرمایہ کاری میں تسلسل سے اضافہ ہو رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی معاشی پالیسی کے تمام شعبوں پر مثبت اثرات سے قومی معیشت خوشحالی کی جانب گامزن ہے ،امید ہے کہ اگلے دس برس میں پاکستان کی شرح نمو میں مزید اضافہ ہوگا ، غیر ملکی سرمایہ کاری میں تسلسل سے اضافہ حکومت کی کامیاب معاشی پالیسی کا واضح ثبوت ہے ، موجودہ حکومت دنیا بھر میں پاکستان کے مثبت امیج کے لئے بھرپور اقدامات یقینی بنارہی ہے ۔ گورنر سندھ نے سوئڈش گروپ کو سرمایہ کاری پر آمادہ کرنے کے لئے جے ایس گلوبل کی کا وشوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ دوطرفہ مفادا ت کے تحت شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے اداروں میں بھرپور تعاون جاری رہے گا ۔ گورنر محمد زبیر نے کہا کہ ملکی تاریخ میں موجودہ دور حکومت میں اتنی خطیرسرمایہ کاری ہو رہی ہیں ، سوئڈش سرمایہ کاری سے خطہ میں روزگار کے مواقع اور غربت کے خاتمہ میں مدد ملے گی ، خطیر سرمایہ کاری سے دوطرفہ تعلقات بھی مزید مستحکم ہو نگے اور خوشحالی و ترقی کے تیز ترین دور کا شاندار آغاز ہوگا ۔استقبالیہ سے خطاب میں سویڈن کی سفیر انگرڈ جوہانسن نے کہا کہ سویڈن پاکستان کو سرمایہ کاری کے حوالہ سے نہایت اہم ملک تصور کرتا ہے خصوصاً اس کے معاشی حب کراچی میں امن و امان کی صورتحال میں بہتری کے بعد فضا سرمایہ کاری کے لئے نہایت سازگار ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سوئڈش سرمایہ کار مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کرینگے ۔ سوئڈش گروپ ٹنڈرا(Tundera Founder) کے سربراہ جون شیبر نے اس موقع پر کہا کہ پاکستان میں سرمایہ کاری کے لئے آئیڈیل حالات ہیں ،پاکستان میں ترقی کا بہت زیادہ پوٹینشل ہے ، ہنر مند افرادی قوت کے باعث خصوصاً کراچی غیر ملکی سرمایہ کاروں کے لئے بہت زیادہ دلچسپی کا حامل ہے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر