لڑکی کی قابل اعتراض تصاویر سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کرنا قابل راضی نامہ جرم نہیں ،عدالت 

لڑکی کی قابل اعتراض تصاویر سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کرنا قابل راضی نامہ جرم نہیں ...
لڑکی کی قابل اعتراض تصاویر سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کرنا قابل راضی نامہ جرم نہیں ،عدالت 

  

لاہور(نامہ نگار)سیشن عدالت نے لڑکی کی قابل اعتزاض تصاویرسوشل میڈیاپراپ لوڈکرنے والے ملزم کی درخواست ضمانت پر فیصلہ محفوظ کر لیا، فریقین میں صلح ہونے پرفاضل جج نے ریمارکس دیئے کہ یہ سنگین جرم ہے اورناقابل راضی نامہ کیس ہے ،ریاست خود بھی مدعی بننے کا حق رکھتی ہے۔

ملزم ڈیفنس کی رہائشی زہرا مرتضٰی کی درخواست پر ایف ائی اے سائبر کرائم سرکل نے ملزم عبیداللہ کے خلاف مقدمہ درج کیا ملزم نے بعد ازگرفتاری ضمانت کی درخواست دائر کی جس کی سماعت ایڈیشنل سیشن جج رفاقت علی گوندل کی عدالت میں ہوئی ،مدعیہ زہرا مرتضی بھی عدالت میں پیش ہوئی اور عدالت کو بتایا کہ ملزم کے والدین نے اس سے معافی مانگ لی ہے اوریقین دھانی کرائی ہے ملزم مستقبل میں اس کو کسی طور بھی ہراساںنہیں کرے گا ،اب وہ مقدمہ کی مزید پیروی نہیں کرنا چاہتی ،عدالت نے ریمارکس دیئے کہ ملزم نے سنگین جرم کیا ہے ،جو ناقابل راضی نامہ ہے ،ریاست خود بھی مقدمے کی مدعی بن کر کاروائی جاری رکھ سکتی ہے ،عدالت معاملے کو دیکھے گی پھر ملزم کی درخواست ضمانت پر فیصلہ ہو گا ،امکان ہے کہ آج 23فروری کو محفوظ کیا گیا فیصلہ سنادیا جائے ۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور