25سے زائد افراد کا زرعی اراضی پر قبضہ کیلئے گاؤں پر دھاوا

25سے زائد افراد کا زرعی اراضی پر قبضہ کیلئے گاؤں پر دھاوا

  



چوک مہرپور(نمائندہ پاکستان) اراضی پرقبضہ کرنے کے لئیے 25 سے زائدمسلح افراد گاؤں میں دھاوابول دیا,عورتوں,بچوں,مردوں پہ وحشیانہ تشددکیا گیا ہے 6 افراد شدیدزخمی ہوگئے تفصیل کے مطابق تھانہ چوک قریشی کے علاقہ بستی حسین ٹبی بوڑھاشرقی میں گزشتہ روز بدالرحمان,محمد اسلم, اصغر, جمیل,اجمل,اکرم,سہیل,منورشکیل,محمودخانزادہ ودیگر مسلح افراد نے زمین پر قبضہ کرنے کے لئیے گئے مگر بستی کے لوگ نزدیکی علاقہ کھوہ بسی والہ گئے(بقیہ نمبر37صفحہ12پر)

دعوت پہ گئے ہوئے تھے کہ مذکورہ افراد نے آتے ہی زمین پہ نئے لگائے گئے درخت اکھاڑناشروع کردئیے اس دوران عبدالجبارولداللہ ڈیوایاموقع پہ آیاتو عبدالرحمان وغیرہ نے اسے تشددکانشانہ بناتے ہوئے بازو اور ٹانگیں توڑدیں شورشرابہ پر محمدیوسف,اللہ ڈتہ,حق نواز چھڑوانے آئے توملزمان نے انہیں بھی تشددکانشانہ بناتے ہوئے زخمی کردیا اہل علاقہ کے جمع ہونے پرملزمان فائرنگ کرتے ہوئے فرارہوگئے مظفرگڑھ شہرکے رہائشی حبیب احمدقوم خانزادہ کاملکیتی رقبہ 45 ایکڑہے جس میں سے ملزمان نے پہلے ہی 12 ایکڑپہ قبضہ کیاہواہے اورمزیدبھی ہتھیانہ چاہتے ہیں گزشتہ روزاسی پاداش میں مسلح ہوکرآگئے اور قبضہ کی کوشش کی موقع پرموجود اللہ ڈیوایا,اکبرخان,سجادحسین,فداحسین,محمداکبر,اللہ بخش,محمدرمضان,محمدنوازودیگرنے بتایاکہ زخمی افرادکوہم رورل ہیلتھ سینٹربصیرہ لے گئے تو ملزمان وہاں بھی آگئے اور 60سالہ حق نوازپہ تشددشروع کردیا جس سے اسکی آنکھ ضائع ہوگئی,زخمی افرادکو ڈسٹرکٹ ہسپتال مظفرگڑھ لے جایاگیاتو تشویشناک حالت کے باعث ڈاکٹرزنے نشترہسپتال ملتان ریفرکردیا جبکہ پولیس نے کاروائی شروع کردی ہے.

مزید : ملتان صفحہ آخر