نظام تعلیم تقسیم‘ نئی نسل اسلامی روایات سے دور ہوتی جارہی ہے‘ سید ذیشان اختر

نظام تعلیم تقسیم‘ نئی نسل اسلامی روایات سے دور ہوتی جارہی ہے‘ سید ذیشان ...

  



بہاول پور(بیورورپورٹ) نائب امیر صوبہ جماعت اسلامی جنوبی پنجاب سید ذیشان اخترنے کہا ہے کہ14 اگست 1947 کے بعد آزادی کے دشمنوں نے جو خطرناک چال(بقیہ نمبر41صفحہ12پر)

چلی ہے وہ نظام تعلیم کی تقسیم تھی، منقسم نظام تعلیم اور منتشر نصاب تعلیم کی وجہ سے ہم اپنی تہذیب سے دور ہوتے جا رہے ہیں،نئی نسل اسلامی روایات سے اجنبی ہوتی جا رہی ہے جو کہ ہماری آنے والی نسلوں کے لئے خطرناک ہے۔وہ رشیدیہ آڈیٹوریم میں الصفا ء سائٹیفکٹ سکول کی سالانہ تقریب تقسیم انعامات میں خطاب کر رہے تھے۔انہوں نے کہا کہ افراد اور اقوام کی زندگی میں تعلیم کو بنیادی حیثیت حاصل ہے کیوں کہ تعلیم ہی وہ بنیادی چیز ہے جس کی وجہ سے افراد اقوام اپنے نصب العین،معیشت،تہذیب،اخلاق و معاشرت کا اظہار کرتے ہیں،لیکن بدقسمتی سے ستر سال گزرنے کے بعد بھی ہم آج وہی کھڑے ہیں جہاں ہم ابتداء میں کھڑے تھے ایسے وقت کا تقاضا ہے کہ نظام تعلیم کی اصلاح کی جائے اور اور ایک ایسا نظام و نصاب تعلیم بنایا جائے جو عصری ضروریات کے ساتھ ساتھ قرآن و سنت کے تقاضوں کو بھی پورا کرے۔تقریب میں سکول کے طلباء نے ملی نغمے،تقریریں، ٹیبلوز پیش کیے جن کو حاضرین نے بہت پسند کیا۔تقریب کے آخر میں مہمان خصوصی سید ذیشان اختر،سکول پرنسپل خالد بن جلیل و دیگر نے نمایاں پوزیشن حاصل کرنے والے طلباء و طالبات میں انعامات تقسیم کیے ہیں۔

ذیشان اختر

مزید : ملتان صفحہ آخر