ضم اضلاع حقوق، مشترکہ تحریک کیلئے دیگر جماعتوں کا انتظار ہے،ایمل ولی

  ضم اضلاع حقوق، مشترکہ تحریک کیلئے دیگر جماعتوں کا انتظار ہے،ایمل ولی

  



  

پشاور(سٹی رپورٹر)عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ نئے ضم شدہ اضلاع کے جرگے کے بعد عوامی نیشنل پارٹی 10مارچ کو پختون قومی جرگہ منعقد کررہی ہے،نئے ضم شدہ اضلاع کے جرگہ میں ان اضلاع کے مسائل کے حل کیلئے مشترکہ تحریک چلانے کیلئے اے این پی کی مرکزی قیادت نے صوبائی تنظیم کو اجازت دے دی ہے،اے این پی کو اب دیگر سیاسی جماعتوں اور تحاریک کے جواب اور لائحہ عمل کا انتظار ہے جس کے بعد نئے ضم شدہ اضلاع کے مسائل کے حل کیلئے مشترکہ تحریک شروع کردی جائیگی۔باچا خان مرکز پشاور میں اے این پی ضلع پشاور کے سابق صدر شہید میاں مشتاق کی چھٹی برسی کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ایمل ولی خان نے کہا کہ باچا خان مرکز پشاور میں منعقد ہونے والے جرگوں کے ثمرات جلد آنا شروع ہوجائینگے،اے این پی پختون قومی جرگہ کے بعد نئے ضم شدہ اضلاع کے مسائل کے حل کیلئے تحریک چلائے گی،اگر کوئی دوسری سیاسی جماعت اے این پی کے ساتھ چلنے کو تیار ہوئی تو اے این پی انکے ساتھ ملکر تحریک چلائے گی لیکن کسی صورت ناکامی سے دوچار نہیں کیا جائیگا،ایمل ولی خان نے یہ بھی کہا کہ اگر پھر سیاسی جماعتیں تحریک چلانے پر تیار نہیں ہوتی تو اے این پی نئے ضم شدہ اضلاع کے مسائل کے حل کیلئے اکیلے بھی تحریک چلانے کیلئے تیار ہے۔انہوں نے کہا کہ پختون قومی جرگہ اپنے شیڈول کے مطابق دس مارچ کو باچا خان مرکز پشاور میں منعقد ہوگا،جس کیلئے تمام سیاسی جماعتوں کے مرکزی قائدین اور تحاریک کے مشران سے رابطوں کا سلسلہ شروع کردیا گیا ہے،پختون قومی جرگہ کے تاریخ کے اعلان کے ساتھ ہی کچھ نام نہاد دانشوروں کی جانب سے اس کی مخالفت بھی کی جارہی ہے لیکن اُن لوگوں کو باخبر ہونا چاہیے کہ نئے ضم شدہ اضلاع کے جرگہ کی طرح پختون قومی جرگہ کا بھی مقصد ہرگز حکومت کا حصول نہیں ہے بلکہ پختونوں کے اصل مسائل کی نشاندہی اور اُس کیلئے مشترکہ جدوجہد کی ضرورت پر زور دینا ہے،انہوں نے کہ پختون قومی جرگہ سے پختون دشمن قوتوں کو بھی اتفاق اور اتحاد کا ایک پیغام دینا ہے،اے این پی کے موجودہ قیادت کی اولین ترجیح پختونوں کو ایل پلیٹ فارم پر اکھٹا کرنا اور پختونوں کے مسائل کے حل کیلئے مشترکہ جدوجہد کرنا ہے۔اے این پی کے صوبائی صدر نے اس موقع پر شہید میاں مشتاق اور اُن کے ساتھیوں کو بھی خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ اے این پی خیبرپختونخوا نہ صرف بہت جلد اپنے شہداء کے حوالے کتاب شائع کرررہی ہے جس میں ان شہداء کے حوالے سے اُن کی تاریخ درج ہوگی اور اس کے ساتھ ساتھ اے این پی اپنے شہداء کیلئے ایک روز بھی مختص کررہی ہے جو کہ اے این پی شہداء کے قومی دن کے حیثیت سے منائی گی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر