وکلاء کے حقوق کیخلاف ہرقانون کی مخالفت کرینگے،پنجاب بار عہدیدار

  وکلاء کے حقوق کیخلاف ہرقانون کی مخالفت کرینگے،پنجاب بار عہدیدار

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)پنجاب بار کونسل کے عہدیداروں نے اعلان کیا ہے کہ کوئی وکیل کسی افسر کے ساتھ بدتمیزی کرے گا تواس کو معاف کرنے کی کوئی گنجائش نہیں،پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پنجاب بار کونسل کے وائس چیئرمین اکرم خاکسار اور چیئرمین ایگزیکٹو کمیٹی جمیل اصغر بھٹی سمیت دیگر وکلا رہنماؤں نے کہا کہ کسی کویہ حق نہیں ہے کہ کسی کو گالی دے یا پھر اس کاہاتھ کسی کے گریبان تک پہنچے،انہوں نے بار کونسل کے قانون میں مجوزہ ترامیم کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ وکلا ء کے خلاف کسی قانون کوتسلیم نہیں کیا جائے گا،وکلاء کے حقوق کے خلاف ہرقانون کی مخالفت کریں گے،انہوں نے کہا کہ کسی ایک کی غلطی کو تمام پیشہ کی غلطی قرار نہ دیا جائے، اگر پنجاب بار کونسل لائسنس دینے کا حق ہے تو اس کو معطل کرنے کا حق بھی رکھتی ہے،انہوں نے کہا کہ وکلاء کو کسی افسر کے خلاف استغاثہ دائر کرنے کا قانونی حق حاصل ہے،وہ قانون کو ہاتھ میں لینے کی بجائے اپنا قانونی حق استعمال کریں گے، پنجاب بار کونسل کے عہدیداروں نے مطالبہ کیا کہ ہائیکورٹ میں ججوں کی خالی اسامیاں جلدپْر کی جائیں اور ہائی کورٹ کوکلب نہ بنایا جائے،ججوں کے رشتہ داروں کو جج مقرر کرنے کی بجائے میرٹ کو ملحوظ خاطر رکھا جائے،پنجاب بار کونسل کے عہدے داروں نے واضح کیا کہ وہ قانون کی حکمرانی پر یقین رکھتے ہیں اوربار کونسل اپنے متعلقہ قوانین پر عمل درآمد یقینی بنائے گی۔

پنجاب بار عہدیدار

مزید : صفحہ آخر