47ء میں بھارت سے تمام مسلمانوں کو پاکستان بھیج دینا چاہئے تھا: گریراج سنگھ

  47ء میں بھارت سے تمام مسلمانوں کو پاکستان بھیج دینا چاہئے تھا: گریراج سنگھ

  



نئی دہلی(آئی این پی)مودی کابینہ کے رکن گریراج سنگھ جو مستقل طور پر نفرت انگیز تقاریر کیلئے مشہور ہے نے اپنے حالیہ بیان میں کہا ہے کہ1947ء میں تمام مسلمانوں کو پاکستان بھیجا جانا چاہئے تھا،باپ دادا کی بڑی غلطی کی بڑی قیمت ہم ادا کر رہے ہیں۔عالمی میڈیا کے مطابق گیرراج سنگھ نے بہار کے علاقے پورنیا میں خطاب کرتے ہوئے کہاکہ اب وقت آگیا ہے کہ مسلمان خود کوایک قوم سے وابستہ کریں۔ 1947ء میں محمد علی جناح نے ایک مسلم قومیت کیلئے زور دیا۔ ہمارے باپ دادا کی یہ بہت بڑی غلطی تھی جس کی قیمت ہم ادا کر رہے ہیں۔ اگر اس وقت مسلمانوں کو پاکستان بھیجا گیا ہوتا اور ہندووں کو یہاں لایا گیا ہوتا تو ہم مختلف صورتحال میں ہوتے۔وزیر برائے امور پروری، دودھ اور ماہی گیری کا یہ بیان شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے)کے خلاف ملک گیر احتجاج کے دوران سامنے آیا ہے جس میں 2015 سے قبل ہندوستان آنے والے پاکستان افغانستان اور بنگلہ دیش سے صرف غیر مسلم مہاجرین کو ہی شہریت دینے کا وعدہ کیا گیا ہے۔

گریراج سنگھ کی زہر افشانی

مزید : صفحہ آخر