پنجاب میں جرائم پر قابو پانے کیلئے مجرموں کے فنگر پرنٹس محفوظ کرنے کا منصوبہ

پنجاب میں جرائم پر قابو پانے کیلئے مجرموں کے فنگر پرنٹس محفوظ کرنے کا منصوبہ

  



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب میں بڑھتے جرائم پر قابو پانے کیلئے مجرموں کے فنگر پرنٹس محفوظ کرنے کا منصوبہ تیاری کی جانب گامزن،صوبے بھر کے تمام جرائم پیشہ افراد کے فنگر پرنٹس حاصل کیے جائیں گے۔ذرائع کے مطابق آٹومیٹڈ فنگرپرنٹ آئیڈنٹفکیشن سسٹم(اے ایف آئی ایس) منصوبے پر مجموعی طور پر 49 کروڑ 50 لاکھ لاگت کا تخمینہ لگایا گیا ہے جبکہ اب تک 39 کروڑ 60 لاکھ روپے لاگت آ چکی ہے۔محکمہ داخلہ پنجاب نے مجرموں کی بیخ کنی کیلئے صوبے بھر کے جرائم پیشہ افراد کے فنگر پرنٹس کا ڈیٹا حاصل کرنے کا منصوبہ بنایا۔ اس سلسلے میں صوبے بھر کی جیلوں اور فارنزک سائنس ایجنسی کے سیٹلائٹ سٹیشنز میں نیا نظام نصب کیا جائے گا،کسی بھی جرم میں ملوث مشتبہ شخص کے فنگر پرنٹس فوری حاصل کرکے ریکارڈ میں محفوظ کر لیے جائیں گے جبکہ کسی بھی جائے واردات سے ملنے والے فنگر پرنٹس کا سسٹم میں موجود پرنٹس سے موازنہ کیا جائے گا۔ذرائع کے مطابق سنٹرلائزڈ سسٹم کے ذریعے صوبے بھر میں کہیں بھی موجود ملزم یا مجرم کی فوری شناخت ممکن ہو سکے گی۔

فنگر پرنٹس منصوبہ

مزید : صفحہ اول