ترقیاتی منصوبوں کے معیار پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا، چوبارہ انڈسٹریل سٹیٹ کے قیام اور لیہ و تونسہ کو موٹر وے کے ساتھ منسلک کرنے کا اعلان

ترقیاتی منصوبوں کے معیار پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا، چوبارہ انڈسٹریل سٹیٹ کے ...

  



لیہ،ڈیرہ چوک اعظم،مظفر گڑھ (ڈسٹرکٹ بیورو رپورٹ،نمائندہ پاکستان)وزیراعلیٰ پنجاب سردارعثمان بزدارنے لیہ کے علاقے چوبارہ میں انڈسٹریل سٹیٹ کے قیام کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس ضمن میں تیزی اقدامات کیے جائیں گے،لیہ اورتونسہ کو موٹر وے کے ساتھ منسلک کرنے کیلئے اقدامات کریں گے، لیہ میں اراکین قومی و صوبائی اسمبلی کی مشاورت سے ترقیاتی کام ہوں گے، لیہ میں مفاد عامہ کی 2284 سکیموں پر 18 ارب 77 کروڑ روپے خرچ کئے جا رہے ہیں، ترقی کے دائرے میں شامل کرکے لیہ کو اس کا حق لوٹائیں گے جبکہ ترقیاتی منصوبوں کے معیار پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے سرکٹ ہاؤس لیہ میں اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں امن عامہ کی صورتحال اور ترقیاتی منصوبوں پر پیش رفت کا جائزہ لیاگیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ پنجاب کے ہر ضلع اور تحصیل کا دورہ کر رہا ہوں اور ترقیاتی منصوبوں پر ہونے والی پیش رفت کا خود جائزہ لیتا ہوں۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ سابق حکومت نے لیہ کے عوام کو بھی زبانی جمع خرچ سے بہلایااور سابق حکمرانوں نے ترقیاتی منصوبوں میں نظر انداز کرکے لیہ کے عوام کے ساتھ ناروا سلوک روا رکھا۔ ہمارے دور میں لیہ کی محرومیاں دور ہوں گی۔ڈیرہ غازی خان میں فرانزک لیب پر کام کیا جارہا ہے اورفرانزک لیب کی تعمیر کا کام جلد مکمل ہوگا۔انہوں نے کہا کہ لیہ میں ڈی پی ایس سکول کے قیام کیلئے اقدامات کریں گے۔ہر ضلع میں یونیورسٹی کے قیام کیلئے کام کیا جارہا ہے۔لیہ میں بہاؤالدین ذکریا یونیورسٹی سب کیمپس کو اپ گریڈ کریں گے۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ سرکاری دفاتر میں اوپن ڈور پالیسی پر سختی سے عملدر آمد کرایا جائے اورافسران عوام کے مسائل کے حل کیلئے کوئی کسر اٹھا نہ رکھیں۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو ضلع لیہ کے ترقیاتی منصوبوں اور دیگر امور سے متعلق بریفنگ دی گئی۔ رکن قومی اسمبلی نیاز احمد جھکڑ، اراکین صوبائی اسمبلی رفاقت علی، طاہر رندھاوا، شہاب الدین، ملک احمد علی اولکھ، کمشنر ڈیرہ غازی خان ڈویژن، آر پی او ڈیرہ غازی خان، ڈپٹی کمشنر و ڈی پی او لیہ اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔دریں اثناء لیہ میں احساس پروگرام کے ”میرا کاروبار میری آمدنی“ کے تحت مستحق افراد میں اثاثہ جات کی تقسیم کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے کہا ہے کہ احساس پروگرام وزیراعظم عمران خان کے قابل قدر وژن کا عکاس ہے،احساس آمدن پروگرام غربت کے خاتمے اورفلاحی ریاست کی جانب ایک بہت بڑا قدم ہے اور اس پروگرام کی تکمیل سے حقیقی فلاحی ریاست کاخواب ضرور شرمند ہ تعبیر ہوگا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے سرائیکی میں خطاب کرتے ہوئے مظفر گڑھ کے علاقے چوک سرور شہید کو تحصیل کا درجہ دینے اور پنجاب میں بھی احساس پروگرام کے اجراء کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت 12ارب روپے کی لاگت سے احساس پروگرام شروع کرے گی۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ احساس آمدن پروگرام سے 18لاکھ افراد براہ راست مستفید ہوں گے جبکہ64لاکھ افرادکو بالواسطہ فائدہ پہنچے گا۔ قومی سطح پر غربت کے خاتمے کی مہم کے تحت پاکستان کے 23اضلاع کی 375یونین کونسل منتخب کی گئی ہیں۔ پنجاب کے 3پسماندہ اور محروم اضلاع لیہ، ڈیرہ غازی خان اور جھنگ بھی اس پروگرام میں شامل ہے۔ لیہ کی 22دیہی یونین کونسل میں 260غریب اور مستحق بہن بھائیوں کواثاثے دینے کا آغاز کیا گیا ہے۔مستحق افراد کو روز گار کمانے کیلئے ٹھیلے، رکشے اورپرچون دکانوں کا سامان بھی فراہم کیاجائے گا۔انہوں نے کہا کہ مستحق دیہی بھائیوں کو گائے اوربکریاں بھی دی جائیں گی۔اس پروگرام میں پہلی مرتبہ دیہات میں بسنے والی ماؤں، بہنوں اور بیٹیوں کو بھی شریک کیا گیا ہے۔ اس پروگرا م میں 60فیصدخواتین اور 40فیصد مرد شامل ہیں۔ روز گار کمانے کیلئے وسائل کی فراہمی یقینا دیہات میں بسنے والوں کی زندگی میں خوشحالی لائے گی۔بعدازاں وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے ڈیرہ غازی خان کے قبائلی علاقے کوہ سلیمان کا اچانک دورہ کیا،وزیر اعلی عثمان بزدار بغیر اطلاع مبارکی اورمٹ چانڈیہ پہنچے توانہیں دیکھ کر قبائلی علاقے کے لوگوں کو خوشگوار حیرت ہوئی-قبائلی لوگوں نے عثمان بزدار زندہ باد کے نعرے لگائے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدارقبائلی لوگوں کے ساتھ پتھریلی زمین پر بیٹھ گئے اور ان میں گھل مل گئے اور مسائل سنے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے قبائلی علاقے کے مسائل جلد حل کرنے کی یقین دہانی کرائی- وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے قبائلی لوگوں کے ساتھ بلوچی زبان میں گفتگو کی اور کہا کہ کوہ سلیمان میرا گھر ہے، مصروفیت کے باعث جلد نہیں آسکا- کوہ سلیمان کے عوام کو بنیادی سہولتوں کی فراہمی کیلئے ہر طرح کے وسائل فراہم کئے ہیں -میں لاہور میں بیٹھ کر پسماندہ علاقوں کا وکیل ہوں اور پسماندہ علاقوں کی محرومیاں دورکرنا میرا مشن ہے - میں اپنے مشن کی تکمیل کیلئے آخری حد تک جاؤں گا-انہوں نے کہا کہ مبارکی میں سیاحت کے فروغ کیلئے ریزارٹ بنایا جا رہا ہے - کوہ سلیمان کو سیاحت کے لحاظ سے ڈویلپ کیا جائے گا-انہوں نے کہا کہ علاقے میں سمال ڈیمز بنانے کیلئے سٹڈی پر کام ہو رہا ہے - قبائلی لوگوں نے وزیر اعلی عثمان بزدار سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ آپ کے مختصر دور میں کوہ سلیمان میں ریکارڈ ترقیاتی کام ہو رہے ہیں جبکہ سابق ادوار میں کوہ سلیمان کو جان بوجھ کر نظرانداز کیا گیا- انہوں نے کہا کہ آپ کو اپنے درمیان دیکھ کر بہت خوشی ہوئی ہے - وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے کوہ سلیمان میں جاری ترقیاتی سکیموں پر پیشرفت کا فضائی جائزہ بھی لیا- وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے تونسہ شریف کا بھی دورہ کیا- وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے تونسہ میں پارٹی کے عہدیداروں و کارکنوں سے بھی ملاقاتیں کیں،وزیر اعلیٰ پنجاب سردارعثمان بزدار ممبر صوبائی اسمبلی میاں علمدار عباس قریشی کے جواں سالہ بھتیجے حسن ہاشمی قریشی کی ناگہانی وفات پر تعزیت کیلئے ان کی رہائش گاہ کرم داد قریشی گئے، اس موقع پر صوبائی مشیر زراعت سردارعبدالحئی خان دستی،معاون خصوصی برائے خوراک سردار خرم سہیل خان لغاری، ممبران صوبائی اسمبلی سردار عون حمید ڈوگر، نیاز احمدخان گشکوری،مخدوم رضا شاہ بخاری اور ڈپٹی کمشنر انجینئر امجدشعیب خان ترین بھی ان کے ہمراہ تھے، وزیر اعلیٰ نے مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی کی۔اس موقع پرملک فاروق کھر سابقہ ایم پی اے، میاں عزیز احمد قریشی، عبدالکریم لشاری، ملک راشد کھلنگ، آغا حسین قریشی، میاں اشفاق احمد قریشی، میاں محمد سلیم قریشی، فیاض حسین خان قلندرانی، پیر منور شاہ، میاں ریاض حسین قریشی، اشفاق احمد کھلنگ، ضیائاحسن قریشی، ندیم قریشی، کریم بخش سہرانی، عاشق حسین مستوئی، رائے آصف رضا، اختر نون اور منظور خان پتافی بھی موجود تھے۔وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار صرف 15 منٹ کے دورے کے بعد واپس روانہ ہوگئے۔وزیراعظم اور وزیراعلی پنجاب نے ڈی جی خان دورویہ روڈ اور رجب طیب اردگان ہسپتال کے توسیعی منصوبے کا افتتاح کیاجبکہ انتظامیہ انڈس ہسپتال نے وزیر اعظم کو بریفنگ دی۔

وزیراعلیٰ پنجاب

مزید : صفحہ اول