مقابلہ حسن میں شامل حسینہ کی فحش تصاویر لیک ہوگئیں، بے دخل کردیا گیا

مقابلہ حسن میں شامل حسینہ کی فحش تصاویر لیک ہوگئیں، بے دخل کردیا گیا
مقابلہ حسن میں شامل حسینہ کی فحش تصاویر لیک ہوگئیں، بے دخل کردیا گیا

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) کسی اجنبی شخص کی ای میل نے ماڈل کو ’مس برطانیہ‘ کے مقابلے سے باہر کروا دیا۔ میل آن لائن کے مطابق 26سالہ پورشا ویلس وولکووا نامی یہ ماڈل مس برطانیہ کے مقابلے کے فائنلسٹ میں شریک تھی جوآج منعقد ہو رہا ہے لیکن چند روز قبل مقابلے کے منتظمین کو ایک ای میل موصول ہوئی جس میں پورشاکی کچھ نیم برہنہ تصاویر تھیں۔ ان تصاویر سے ثابت ہو گیا کہ پورشا اپنا ماضی چھپا کر اس مقابلے میں حصہ لے رہی تھی۔ جس پر منتظمین نے اسے نااہل قرار دے کر مقابلے سے باہر کر دیا۔

رپورٹ کے مطابق پورشا اس سے قبل مس کینسگٹن کا مقابلہ جیت چکی تھی اور اب مس برطانیہ بننے کے لیے پرعزم تھی۔ تاہم اس کا ماضی آڑے آ گیا جب وہ برہنہ اور نیم برہنہ فوٹوشوٹ کروایا کرتی تھی۔ منتظمین کو بھیجی گئی تصاویر انہی فوٹوشوٹس میں سے تھی۔ اس مقابلے کی پالیسی ہے کہ جو ماڈل نیم برہنہ یا برہنہ فوٹوشوٹ کروا چکی ہو وہ مقابلے کی اہل نہیں ہوتی۔ مقابلے سے نکالے جانے پر پورشا کا کہنا ہے کہ ”مجھے محسوس ہوتا ہے کہ سائبر غنڈے جیت گئے ہیں اور میں ہار گئی ہوں۔ میں نے 21سال کی عمر کے بعد اس طرح کے فوٹوشوٹس نہیں کروائے۔ اب تک میں چیئرٹی کے لیے اچھی خاصی رقم جمع کر چکی ہوں۔ ان لوگوں نے میرے ماضی کی یہ تصاویر دیکھ لیں،میرے اچھے کام نہیں دیکھے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس