صوبائی اور وفاقی انسپکٹر آف ڈرگ کنٹرول ٹیم نے چھاپہ مار کر روایتی 3ml اور 5ml کی سرنجیں برآمد کر لیں 

صوبائی اور وفاقی انسپکٹر آف ڈرگ کنٹرول ٹیم نے چھاپہ مار کر روایتی 3ml اور 5ml کی ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


پشاور(سٹی رپورٹر)ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان نے روایتی سرنج 3ml، 5ml کی رجسٹریشن منسوخ کر دی تھی اور مارکیٹ میں اس کی تیاری اور فروخت پر پابندی عائد کر دی تھی۔ چیف ڈرگ انسپکٹر پشاور کی سربراہی میں ڈرگ کنٹرول ٹاسک فورس کی ٹیم نے ضلعی انتظامیہ پشاور کے تعاون سے فیڈرل انسپکٹر آف ڈرگ نے M/S فرنٹیئر فارماسیوٹیکل پرائیویٹ لمیٹڈ حیات آباد پشاور کی تیار کردہ روایتی سرنجوں کا بھاری ذخیرہ برآمد کیا۔ اس کے بعد ٹاسک فورس پارٹی نے ضلعی انتظامیہ پشاور کے تعاون سے حیات آباد انڈسٹریل اسٹیٹ پشاور میں واقع مینوفیکچرنگ فسیلٹی پر چھاپہ مارا اور وہاں سے تیار شدہ روایتی سرنجیں 3 اور 5 ملی لیٹر برآمد کر لیں۔ ریکوری کے بعد تمام سٹاک اور متعلقہ ریکارڈ قبضے میں لے لیا گیا اور ڈرگ ایکٹ 1976 اور DRAP ایکٹ 2012 کی مختلف دفعات کی خلاف ورزی کرتے ہوئے احاطے کو تالے لگا کر سیل کر دیا گیا۔ ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا جو غیر رجسٹرڈ روایتی سرنج 3ml اور 5 ml میں ملوث تھے۔ ڈائرکٹرویٹ جنرل ڈرگ کنٹرول اینڈ فارمیسی سروسز، ٹاسک فورس غیر قانونی ادویات کی روک تھام کے لیے پرعزم ہے اور اس طرح کی سرگرمیوں میں ملوث اہلکاروں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا۔