تحریک انصاف نے جیل بھر و تحریک کا آغاز کر دیا

تحریک انصاف نے جیل بھر و تحریک کا آغاز کر دیا
تحریک انصاف نے جیل بھر و تحریک کا آغاز کر دیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن ) تحریک انصاف نے جیل بھرو تحریک کا آغاز لاہور  کے علاقے مال روڈ سے کر دیاہے ۔
تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی کے رہنما شاہ محمود قریشی، عمر سرفراز چیمہ،زبیر نیازی اور سینیٹر ولید اقبال نے خود کو گرفتاری کیلئے پیش کر دیاہے ،پولیس نے شاہ محمود قریشی کو قیدیوں کی وین میں بٹھا لیا ہے، اعظم سواتی اور اسدعمر بھی پولیس وین میں سوار ہو گئے ہیں، مال روڈ پر موجود پولیس وین پر جیسے ہی رہنما گرفتاری دینے کیلئے داخل ہوئے تو کارکنان بھی بڑی تعداد میں ان کے پیچھے ہی داخل ہو گئے جبکہ اندر جگہ نہ بچنے کے بعد کارکنان نے وین کی چھت پر ڈیرہ ڈال لیا۔ تحریک انصاف نے جیل بھرو تحریک کا آغاز لاہور سے کر دیاہے ، رہنماﺅں کی قیادت میں لاہور بھر میں ریلیاں نکالنے کا سلسلہ جاری ہے جبکہ جیل روڈ سمیت لاہور کی اہم شاہراہیں رش کے باعث بلاک ہو چکی ہیں ۔ 

تحریک انصاف کے مرکزی رہنماوں نے لاہور سے گرفتاریاں دینے کا سلسلہ تو شروع کر دیاہے اور پولیس وین سے سیلفیاں بنا کر بھی شیئر کی جارہی ہیں، تاہم پولیس نے وضاحت کرتے ہوئے کہاہے کہ کسی رہنما کو گرفتار کرنے کے احکامات موصول نہیں ہوئے ہیں، پی ٹی آئی کے رہنما اور کارکنان از خود پولیس وین میں سوار ہو گئے ہیں۔

لاہور میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ عمران خان نے انہیں کہا ہے وہ اپنے آپ کو گرفتاری کے لیے پیش نہ کریں کیوں کہ وہ پارٹی چیئرمین کے بعد دوسرے بڑے رہنما ہیں، لیکن ان کا کہنا تھا کہ وہ کارکنان کے بجائے پہلے خود گرفتاری دے کر مثال قائم کرنا چاہتے ہیں۔پارٹی کی جانب سے تحریک چلانے کی وجوہات بتاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) عدلیہ کے خلاف مہم چلارہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ (ن) کی قیادت نے جس طرح عدلیہ پر حملہ کیا ہے اس کی مثال نہیں ملتی۔ وکلا ءبرادری سے میری مؤدبانہ گزارش ہے کہ بار رومز اور بار کونسلز کو خاموش نہیں رہنا چاہیے اور اپنا کردار ادا کرنا چاہیے کیوں کہ ان پر یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے۔ ایک ادارے کو ڈرایا جا رہا ہے، اس کے راستے میں رکاوٹیں کھڑی کی جا رہی ہیں، معزز جج صاحبان کی توہین ہو رہی ہے، یہ سب کچھ مناسب نہیں۔

مزید :

قومی -