آئینی عہدوں کیلئے لابنگ شروع،چیئرمین سینیٹ، سپیکر ، ڈپٹی سپیکر،گورنرز اور دیگر کے نام سامنے آگئے

 آئینی عہدوں کیلئے لابنگ شروع،چیئرمین سینیٹ، سپیکر ، ڈپٹی سپیکر،گورنرز اور ...
 آئینی عہدوں کیلئے لابنگ شروع،چیئرمین سینیٹ، سپیکر ، ڈپٹی سپیکر،گورنرز اور دیگر کے نام سامنے آگئے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )صدر مملکت کیلئے آصف علی زرداری اور وزارت عظمیٰ کیلئے شہباز شریف کے نام فائنل ہونے کے بعد اب دیگر آئینی عہدوں کیلئے لابنگ شروع ہوگئی۔
نجی ٹی وی جیو نیوز کے ذرائع کے مطابق چیئرمین سینیٹ کیلئے فاروق نائیک، سلیم مانڈوی والا، شیری رحمان اور یوسف گیلانی کے نام زیر غور ہیں جبک سپیکر قومی اسمبلی کیلئے ایاز صادق، ڈپٹی سپیکر کیلئے شازیہ مری اور نفیسہ شاہ کے نام زیر غور ہیں۔
قائد ایوان سینیٹ کیلئے اسحاق ڈار اور اعظم نذیر تارڑ، گورنر پنجاب کیلئے مخدوم احمد محمود، قمر زمان کائرہ اور ندیم افضل چن، وزیراعلیٰ بلوچستان کیلئے سر فراز بگٹی، صادق عمرانی اور ثناءاللہ زہری، گورنر خیبر پختونخوا کیلئے فیصل کریم کنڈی، شجاع خان، یاور نصیر اور امجد آفریدی کے ناموں پر غور کیا جارہا ہے۔
گورنر سندھ کا عہدہ ایم کیو ایم کو ملنے کا امکان ہے اور موجودہ گورنر کامران ٹیسوری کے بدستور کام جاری رکھنے کی توقع ہے۔ 
ذرائع کے مطابق سپیکر پنجاب اسمبلی کےلئے مجتبیٰ شجاع الرحمان اور ڈپٹی سپیکر کیلئے ظہیر چنہڑ کے نام پر اتفاق ہوا ہے۔پیپلز پارٹی نے بلوچستان میں حکومت سازی کیلئے مشاورت مکمل کرلی ہے اور ذرائع نے بتایا کہ پیپلز پارٹی نے بلوچستان کی وزارت اعلیٰ کیلئے تین ناموں پر غور کیا جن میں صادق عمرانی، ثناءاللہ زہری اور سرفراز بگٹی کے نام شامل ہیں۔
ذرائع کے مطابق مسلم لیگ (ن) کو سپیکر اور سینئر وزیر کا عہدہ دیا جائے گا اور دونوں پارٹیوں کو ایک جتنی صوبائی وزارتیں دی جائیں گی۔ذرائع نے بتایا کہ بلوچستان کے وزیراعلیٰ کیلئے نام کا اعلان اگلے 36 گھنٹوں تک کردیا جائے گا۔ذرائع کا کہنا ہے چیئرمین سینیٹ کے لیے یوسف رضا گیلانی موسٹ فیورٹ امیدوار ہیں، ایوان بالا میں ان کی ابھی 3 سال مدت رہتی ہے، چیئرمین سینیٹ بننے کی صورت میں وہ قومی اسمبلی کی سیٹ چھوڑ دیں گے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ یوسف رضا گیلانی کی نشست پر ان کا بیٹا ضمنی الیکشن لڑے گا۔