نئی پینشن اصلاحات کی منظوری کا معاملہ لٹک گیا ، اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نےکتنی تجاویز پر تشویش کا اظہار کردیا ؟ تفصیلات جانیے

نئی پینشن اصلاحات کی منظوری کا معاملہ لٹک گیا ، اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نےکتنی ...
 نئی پینشن اصلاحات کی منظوری کا معاملہ لٹک گیا ، اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نےکتنی تجاویز پر تشویش کا اظہار کردیا ؟ تفصیلات جانیے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) نئی پینشن اصلاحات کی منظوری کا معاملہ لٹک گیا ، اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نےکتنی تجاویز پر تشویش کا اظہار کردیا ؟ اس حوالے سے اہم تفصیلات سامنے آئی ہیں ۔خبر رساں ادارے "صباح نیوز" کے مطابق  نگران حکومت نے نئی پینشن اصلاحات کی منظوری دینے کے بجائے اس اہم معاملے کو نئی منتخب ہونے والی وفاقی حکومت پر چھوڑ نے کا فیصلہ کیا ہے۔وزارت خزانہ کے حکام کے مطابق پینشن جامع اصلاحات کی سفارشات کی تیاری جاری ہے اور وزارت خزانہ، اسٹیبلشمنٹ ڈویژن اور کابینہ ڈویژن وزارت خزانہ کے ریگولیشن ونگ کے توسط سے ان سفارشات کو اپنے مؤقف کی صورت میں وزیر اعظم کو ارسال کر رہے ہیں،اس ضمن میں اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے نگران وزیر اعظم کو سمری کی صورت میں خط میں مجوزہ پینشن اصلاحات کی3اہم تجاویز پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے حکومت سے ان پر نظرثانی کی درخواست کی ہے۔ا سٹیبلشمنٹ ڈویژن نے حکومت سے گزشتہ 36ماہ کے سرکاری مراعات کے 70فیصد کے برابر پینشن کی رقم کا تعین کرنے کی تجویز ،قبل از وقت ریٹائرمنٹ لینے والے ملازمین کی پینشن میں بچ جانے والے سالوں کی بنیاد پر 3فیصد سالانہ پینشن میں کٹوتی کی تجویز اور پینشن کے بوجھ کو موخر کرنے کیلئے سرکاری ملازمت کی عمر60سال سے بڑھاکر62سال کرنے کی تجویز کی بھی مخالفت کی ہے۔