شدت پسندی کے ساتھ تعلق پر نظر ثانی کی ضرورت مغرب کو ہے

شدت پسندی کے ساتھ تعلق پر نظر ثانی کی ضرورت مغرب کو ہے

 برلن(اے پی پی) جرمنی کے تجزیہ نگار یورگن نے کہا ہے کہ مغرب مسلم دنیا سے کہیں زیادہ ظالم ہے۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق شام اور عراق کا دورہ کرنے والے دہشت گردی کے خلاف جدوجہد کے ماہر تجزیہ نگار نے برلن میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ شدت پسندی کے ساتھ تعلق پر نظر ثانی کی ضرورت دین اسلام کو نہیں مغرب کو ہے ‘ انہوں نے مزید کہا کہ اصل مسئلے کی جڑ عرب ممالک نہین بلکہ امریکا کے عراق پر قبضے نے داعش اور اس سے قبل کی دہشت گرد تنظیموں کے ظہورکی راہ ہموار کی تھی یورگن نے کہا کہ گزشتہ 2 برسوں کے دوران کسی بھی عرب ملک نے مغرب پر حملہ نہیں کیا تاہم مغرب نے متعدد بار عرب ملکوں پر حملے کئے انہوں نے اعدادو شمار بتاتے ہوئے کہا کہ جارج بش صرف عراق جنگ میں 5 لاکھ افراد کی ہلاکتوں کا موجب بنے۔

مزید : عالمی منظر


loading...