پنجاب انسٹیٹیوٹ آف لینگوئج، آرٹ اینڈ کلچرکا’’خواتین امن مشاعرہ‘‘ کا انعقاد

پنجاب انسٹیٹیوٹ آف لینگوئج، آرٹ اینڈ کلچرکا’’خواتین امن مشاعرہ‘‘ کا ...
پنجاب انسٹیٹیوٹ آف لینگوئج، آرٹ اینڈ کلچرکا’’خواتین امن مشاعرہ‘‘ کا انعقاد

  


 لاہور (فلم رپورٹر) پنجاب انسٹیٹیوٹ آف لینگوئج، آرٹ اینڈ کلچر کی طرف سے امن، برداشت اور بھائی چارہ کے آفاقی پیغام کے حوالے سے ’’خواتین امن مشاعرہ‘‘ کا انعقاد کیا گیا جس کی صدارت معروف شاعرہ،دانشور اور ادیبہ بشریٰ رحمن نے کی اور برطانیہ سے تشریف لائی ہوئی معروف شاعرہ اور دانشور مہ جبیں غزل انصاری مہمانِ خصوصی تھیں جبکہ امریکہ میں مقیم معروف شاعرات الماس شبی اور ناہید ورک نے بطورِمہمانِ اعزاز شرکت کی۔ دیگر شاعرات میں صوفیہ بیدار، عائشہ اسلم، رخسانہ نور، نیلما ناہید درانی، شاہدہ دلاور شاہ، حرا رانا، آسناتھ کنول، ڈاکٹر امبرین منیر، ڈاکٹر فوزیہ تبسم، فاخرہ انجم، شبنم مرزا، شبہ طراز، زاہدہ جبین راؤ، نگہت اکرم اور راحیلہ اشرف شامل تھیں جنہوں نے امن، برداشت اور رواداری کے حوالے سے اپنا کلام سنایا۔ ڈاکٹر صغرا صدف ڈائریکٹر پِلاک نے تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا اور اپنا کلام بھی سنایاجسے حاضرین نے بہت سراہا۔ تقریب میں شہر کی معروف علمی، ادبی شخصیات سمیت شعراء کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ شاعرات نے اپنے کلام میں اس عزم کا اظہار کیا کہ مائیں امن کی پیامبر ہیں مگر جب ان کی اولاد خطرے میں ہو تو وہ ہر مشکل کے سامنے ڈٹ جانے کا حوصلہ بھی رکھتی ہیں۔ شاعرات نے پاک فوج کے بہادر جوانوں کو بھی خراجِ تحسین پیش کیا جو قوم کی حفاظت اور بقا کے لئے کوشاں ہیں۔

مزید : کلچر


loading...