پاکستان کشمیر پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں کریگا ،سرتاج عزیز

پاکستان کشمیر پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں کریگا ،سرتاج عزیز

                                           اسلام آباد(آن لائن+اے این این) وزیراعظم کے مشیر برائے امور خارجہ سرتاج عزیز نے کہا ہے کہ بھارت کے عزائم خطرناک ہیں، سیز فائر کی خلاف ورزی کرکے آپریشن ضرب عضب سے پاک فوج کی توجہ ہٹائی جارہی ہے، پاکستان کشمیر پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں کرے گا، مذاکرات بھارت نے ختم کیے، بحالی کا فیصلہ بھی اسے ہی کرنا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد میں منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہاکہ بھارت کی جانب سے پاکستان کے ساتھ مذاکرات نہ کرنے کا فیصلہ افسوسناک ہے، مذاکرات بھارت نے ختم کیے تھے اور ان کی بحالی کا فیصلہ بھی اسے ہی کرنا ہے۔ پاکستان کی کشمیر پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ کنٹرول لائن اور ورکنگ باﺅنڈری پر بھارت کی فائرنگ سے ظاہر ہوتا ہے کہ اس کے عزائم خطرناک ہیں وہ سیز فائر کی خلاف ورزیوں کے ذریعے پاک فوج کی آپریشن ضرب عضب سے توجہ ہٹانا چاہتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ جنوبی ایشیاءعلاقائی تبدیلی کے دور سے گزر رہا ہے، خطے میں معاشی تبدیلیاں آرہی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ خطے میں امن و استحکام کیلئے بھارت اور افغانستان کے ساتھ بہتر تعلقات ناگزیر ہیں اس کے بغیر خطے میں امن قائم نہیں ہوسکتا۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان تمام پڑوسی ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات چاہتا ہے، پرامن افغانستان پاکستان کے مفاد میں ہے، ہم اپنی سرزمین کسی پڑوسی ملک کے خلاف دہشت گردی کیلئے استعمال نہیں ہونے دینگے۔

مزید : صفحہ اول


loading...