وفاقی دارالحکومت سمیت پنجاب ،سندھ اور بلوچستان میں بارش ،برفباری سے موسم مزید سرد

وفاقی دارالحکومت سمیت پنجاب ،سندھ اور بلوچستان میں بارش ،برفباری سے موسم ...

                            اسلام آباد /لاہور / کراچی / کوئٹہ/لیہ (کامرس رپورٹر،آئی این پی)وفاقی دارالحکومت سمیت پنجاب،سندھ اور بلوچستان کے مختلف علاقوں میں بارش سے موسم مزید سردہوگیا ، کوئٹہ اور زیارت میں برفباری سے گرم مشروبات کی مانگ میں اضافہ ہوگیا،خشک سردی کا خاتمہ ،بلوچستان کے ساحلی علاقوں میں جاری بارش کی وجہ سے ندی نالوں میں طغیانی سے تربت اور گوادر کا کراچی سے زمینی رابطہ بحال ہو گیا،بلوچستان کے مختلف علاقوں میں 32 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی ، چمن میں برفباری کے باعث کوئٹہ چمن قومی شاہراہ بند ہو گئی، زیارت اور گرد و نواح میں اب تک ڈیڑھ فٹ تک برف پڑ گئی،بہاولپور، رحیم یار خان اور ملتان سمیت پنجاب کے جنوبی علاقوں میں ہلکی بوندا باندی، اوکاڑہ، فیصل آباد، سرگودھا اور لاہور میں بھی ٹھنڈی ہوا کے ساتھ ہلکی بارش کا سلسلہ جاری ، لاہور میں بارش سے 75 فیڈر ٹرپ کرگئے ،شہر کا بڑا حصہ بجلی سے محروم ہوگیا، ترجمان موٹروے پولیس نے کہا ہے کہ بارش کی وجہ سے نیشنل ہائی وے پر لاہور سے رحیم یارخان تک پھسلن ہے ، عوام ان شاہراہوں پر سفر کے دوران محتاط رہیں،محکمہ موسمیات کی آئندہ 24 گھنٹوں کے دوران بلوچستان میں کوئٹہ، ذوب اور قلات کے میں اکثر مقامات پر برفباری جبکہ بالائی پنجاب کے ساتھ خیبر پختونخوا، گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر کے بیشتر مقامات پر میدانی علاقوں میں بارش اور پہاڑوں پر برفباری ہوسکتی ہے۔ مغرب سے داخل ہونے والا بارشوں اور برفباری کا سسٹم ملک کے بیشتر حصوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔گزشتہ روز سے بلوچستان کے ساحلی علاقوں میں جاری بارش کی وجہ سے ندی نالوں میں طغیانی سے تربت اور گوادر کا کراچی سے زمینی رابطہ منقطع ہوگیا تھا جسے اب بحال کردیا گیا ۔ کراچی سمیت سندھ بھر کے ساحلی علاقوں میں گزشتہ رات کہیں ہلکی اور کہیں تیز بارش ہوئی۔کراچی سمیت سندھ اور بلوچستان کے جنوبی علاقوں میں بارش برسانے کے بعد اب یہ سسٹم پنجاب اور شمال مغربی بلوچستان میں بارش اور برفباری کا باعث بننے لگا۔ بلوچستان کے مختلف علاقوں میں اب تک 32 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی ۔ چمن میں گزشتہ رات سے برفباری کا سلسلہ جاری رہا۔ کوژک کے مقام پر شدید برفباری کے باعث کوئٹہ چمن قومی شاہراہ بند ہو گئی جس سے دونوں اطراف درجنوں گاڑیاں پھنس گئیں۔ زیارت،کان مہترزئی اور خانوزئی میں برفباری کے بعد ٹھنڈی یخ ہوائیں خون جمانے لگیں۔ زیارت اور گرد و نواح میں اب تک ڈیڑھ فٹ تک برف پڑ گئی ۔ برفباری کے بعد زیارت شہر کا چوتیر اور سنجاوی سے زمینی رابطہ منقطع ہوگیا جبکہ شہر سے نواحی دیہات تک رسائی میں بھی مشکلات کا سامنا رہا۔بہاولپور، رحیم یار خان اور ملتان سمیت پنجاب کے جنوبی علاقوں میں ہلکی بوندا باندی ہوئی۔ اوکاڑہ، فیصل آباد، سرگودھا اور لاہور میں بھی ٹھنڈی ہوا کے ساتھ ہلکی بارش کا سلسلہ وقفے وقفے سے جاری رہا۔ لاہور کے لوگ جہاں بارش سے خوشگوار احساس میں مبتلا ہوئے وہیں 75 فیڈر بھی ٹرپ کرگئے جس کی وجہ سے شہر کا بڑا حصہ بجلی سے محروم ہوگیا ۔ ترجمان موٹروے پولیس نے کہا ہے کہ بارش کی وجہ سے نیشنل ہائی وے پر لاہور سے رحیم یارخان تک پھسلن ہے ، اس لئے عوام ان شاہراہوں پر سفر کے دوران محتاط رہیں۔محکمہ موسمیات کے مطابق آئندہ 24 گھنٹوں کے دوران بلوچستان میں کوئٹہ، ڑوب اور قلات کے میں اکثر مقامات پر برفباری جبکہ بالائی پنجاب کے ساتھ خیبر پختونخوا، گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر کے بیشتر مقامات پر میدانی علاقوں میں بارش اور پہاڑوں پر برفباری ہوسکتی ہے۔

مزید : صفحہ اول


loading...