دہشت گردی کی آڑ میں مدارس کو نشانہ نہیں بننے دینگے ،فضل الرحمن

دہشت گردی کی آڑ میں مدارس کو نشانہ نہیں بننے دینگے ،فضل الرحمن

اوکاڑہ(اے این این )جمعیت علماء اسلام (ف)کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ دہشت گردی کی آڑ میں مدارس کو نشانہ نہیں بننے دینگے،21ویں ترمیم کے مطابق حکومت دینی مدارس کے خلاف کاروائی نہیں کر سکتی، تحفظات مدارس کے ایجنڈے پر تمام دینی جماعتیں ایک ایجنڈے پر متفق ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سکھر سے لاہور جاتے ہوئے جامعہ مدنیہ اوکاڑہ میں جے یو آئی (ف) کی مرکزی مجلس شوریٰ کے رکن حاجی احسان شاہ گیلانی کی رہائش گاہ پرسینئر صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کیا اس موقع پر جے یو آئی پنجاب کے سیکرٹری اطلاعات حافظ عتیق الرحمان بھی موجود تھے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ سانحہ پشاور کے بعد پورے ملک کی فضاء سوگوار تھی لیکن بنی گالہ میں شہنایاں بج رہی تھیں کیا عمران خان کا یہی نیا پاکستان تھا ،وہ نیا پاکستان تو نہ بنا سکے مگر نیا جیون ساتھی چن لیا۔ انہوں نے کہا کہ گستاخانہ خاکوں کی اشاعت پوری دنیا کے مسلمانوں کے جذبات سے کھیلنے کے مترادف ہے انہوں نے کہا کہ جمعرات کو ایوان اقبال لاہور میں ہونے والی قومی امن کانفرنس میں مدارس کے حوالہ سے آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کیا جائے گا ۔

مزید : صفحہ آخر


loading...