لاہور کا شہری موٹر سائیکل کی ٹینکی بغل میں دبائے پیٹرول لینے پہنچ گیا

لاہور کا شہری موٹر سائیکل کی ٹینکی بغل میں دبائے پیٹرول لینے پہنچ گیا
لاہور کا شہری موٹر سائیکل کی ٹینکی بغل میں دبائے پیٹرول لینے پہنچ گیا

  


لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب میں بدترین پیٹرولیم بحران کے باعث جہاں شہری شدید پریشان میں مبتلا ہیں وہیں کچھ لوگوں نے ایسے طریقے بھی ایجاد کر لئے ہیں جن کے بارے میں سن کر بے اختیار ہنسی آ جائے۔ برقعہ پہن کر پیٹرول حاصل کرنے والے شخص کے بعد اب ایک ایسا شخص بھی سامنے آ گیا ہے جس نے ’’پیٹرول صرف ٹینکی میں ہی ملے گا‘‘ ، کے معاملے کا انوکھا حل ڈھونڈ لیا اور موقع پر موجود لوگ ہنسی روکنے میں ناکام ہو گئے۔حکومت پنجاب کی جانب سے گیلن اور بوتلوں میں فروخت پر پابندی کے بعد ہر پیٹرول پمپ پر ایک ہی ’’حکم‘‘ سننے کو مل رہا ہے کہ پیٹرول صرف ٹینکی میں ہی ملے گا۔ اس بات کو مدنظر رکھتے ہوئے ایک شہری موٹر سائیکل تو نہ لا سکا البتہ موٹر سائیکل کی ٹینکی ضرور لے آیا۔ جی ہاں حاجی غلام فرید نامی ایک شہری موٹر سائیکل کی ٹینکی بغل میں دبائے پیٹرول پمپ پر پہنچا اور لائن میں کھڑا ہو گیا۔ آس پاس کھڑے لوگوں نے اس سے پوچھا کہ یہ کیا معاملہ ہے تو اس نے کہا کہ ٹینکی تو ٹینکی ہی ہوتی ہے، خواہ موٹر سائیکل پر نصب ہو یا بغل میں دبا رکھی ہو، بہرحال اسے پیٹرول تو مل جانا چاہئے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...