18سالہ طالبہ کا خودکشی سے قبل فیس بک پر خوفناک پیغام

18سالہ طالبہ کا خودکشی سے قبل فیس بک پر خوفناک پیغام
18سالہ طالبہ کا خودکشی سے قبل فیس بک پر خوفناک پیغام

  


شکاگو (نیوز ڈیسک) موت کا وقت کسی کو معلوم نہیں لیکن بعض اوقات جانے والے اپنی رخصتی سے عین پہلے ایسی بات کہہ دیتے ہیں کہ انسان سوچنے پر مجبور ہو جاتا ہے کہ کیا یہ محض اتفاق تھا کہ مرنے والے نے موت سے پہلے اپنے جانے کی بات کر دی۔ امریکی ریاست نیو جرسی میں پیش آنے والا اندوہناک واقعہ بھی ایک ایسی ہی مثال بن گیا۔ ٹیمپل یونیورسٹی کی فرسٹ ائیر کی 18 سالہ طالبہ ربیکا کم نے اپنی فیس بک پر لکھا ’’یہ ایک ارادی فعل تھا‘‘ اور چند لمحے کے بعد ہی وہ سنٹر سٹی بلڈنگ کی آٹھویں منزل سے زمین پر آ گری۔پولیس کا کہنا ہے کہ نوعمر طالبہ بلڈنگ میں دوستوں سے ملنے آئی تھی۔ خیال ظاہر کیا گیا ہے کہ وہ بالکونی کی حفاظتی دیوار پر بیٹھی تھی اور شائد تصاویر بنا رہی تھی۔ ربیکا عمارت کی بالکونی سے نیچے چلتی 44 سالہ راہگیر خاتون کے اوپر گری۔ بیچاری خاتون شدید ٹکر سے بری طرح زخمی ہو گئیں۔ ان کی کمر کا ایک مہرہ ٹوٹ گیا اور دانت ٹوٹ کر باہر آ گئے۔ ربیکا کو جیفرسن یونیورسٹی ہسپتال لے جایا گیا جہاں اس کی موت کی تصدیق کر دی گئی۔ زخمی خاتون کی حالت سنبھل رہی ہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...