بھارتی سپریم کورٹ نے آئی پی ایل سپاٹ فکسنگ کا تفصیلی فیصلہ سنا دیا

بھارتی سپریم کورٹ نے آئی پی ایل سپاٹ فکسنگ کا تفصیلی فیصلہ سنا دیا
بھارتی سپریم کورٹ نے آئی پی ایل سپاٹ فکسنگ کا تفصیلی فیصلہ سنا دیا

  


نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک)بھارتی سپریم کورٹ نے آئی پی ایل فکسنگ کیس پر تفصیلی فیصلہ سنا دیاہے جس کے مطابق سر نواسن کے داماد گروناتھ اور شلپاشیٹھی کے شوہر جوئے میں ملوث پائے گئے ۔تفصیلات کے مطابق بھارتی سپریم کورٹ نے آئی پی ایل سپاٹ فکسنگ کیس پر 130صفحات پر مشتمل فیصلہ سنا دیا ہے جس کے مطابق سری نواسن کے دامادگروناتھ اور شلپاشیٹھی کے شوہر سپاٹ فکسنگ میں ملوث پائے گئے ہیں جبکہ سری نواسن پر کوئی الزام ثابت نہیں ہواجس کے بعد بھارتی سپریم کورٹ نے بھارتی بورڈ کے عہدیداروں پر آئی پی ایل میں ٹیم خریدنے پر پابندی عائد کر دی ۔بھارتی سپریم کورٹ کے جج نے فیصلہ سناتے ہوئے کہاکہ بی سی سی آئی کمیٹی تشکیل دے گی جو اس کیس کا تفصیلی جائزہ لے گی اور بی سی سی آئی کے معاملات پر عدالت ہی فیصلہ کرنے کی مجاز ہے ۔

بھارتی سپریم کورٹ کے جج نے فیصلہ سناتے ہوئے ریمارکس دیے کہ بی سی سی آئی میں کچھ لوگوں کی اجارداری ہے اور آئی پی ایل جوئے کا گڑھ بن چکاہے ۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں


loading...