جماعت الدعوة کے اثاثے منجمد، حافظ سعید پر بین الاقوامی سفر پر پابندی عائد کر دی گئی

جماعت الدعوة کے اثاثے منجمد، حافظ سعید پر بین الاقوامی سفر پر پابندی عائد کر ...
جماعت الدعوة کے اثاثے منجمد، حافظ سعید پر بین الاقوامی سفر پر پابندی عائد کر دی گئی

  


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) حکومتِ پاکستان نے جماعت الدعوة سمیت تمام کالعدم تنظیم کے اثاثے منجمد کر دیئے ہیں اور جماعت الدعوة کے سربراہ حافظ سعید کے بین الاقوامی سفر پر پابندی عائد کر دی ہے۔ دفتر خارجہ کی ترجمان تسنیم اسلم نے ہفتہ وار بریفنگ کے دوران بتایا کہ اقوام متحدہ نے جن جماعتوں پر پابندی عائد کی ہے ان کے خلاف کارروائی کر رہے ہیں جبکہ جماعت الدعوة اور حافظ سعید پر عائد پابندیاں بھی نیشنل ایکشن پلان اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے تحت ہیں۔ واضح رہے کہ امریکہ اور بھارت حافظ سعید کی سربراہی میں کام کرنے والی فلاحی تنظیم جماعت الدعوة کا تعلق کالعدم ”لشکر طیبہ“ سے بتاتے رہے ہیں جبکہ لشکر طیبہ پر 2008ءمیں ہندوستان میں ممبئی حملوں کا ذمہ دار بھی قرار دیا جاتا ہے۔ امریکہ کی جانب سے متعدد بار حافظ سعید پر پابندی لگانے کا مطالبہ کیا جاتا رہا ہے تاہم یہ معاملہ تاخیر کا شکار رہا۔

تسنیم اسلم کا کہنا تھا کہ پاکستان نے حقانی نیٹ ورک پر بھی پابندی عائد کردی ہے تاہم اس کے پاکستان میں کوئی بینک اکاﺅنٹس موجود نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پابندی اور اثاثے منجمد کرنے کے فیصلے کسی دباﺅ کے تحت نہیں بلکہ پاکستان کے وسیع تر مفاد میں کئے گئے ہیں ۔ واضح رہے کہ حقانی نیٹ ورک کے سربراہ جلال الدین حقانی ہیں اور اس تنظیم کو افغانستان میں موجود امریکی فوج پر متعدد حملوں کے بعد 2012 ءمیں امریکہ کی جانب سے دہشت گرد تنظیم قرار دیا گیا۔ پاکستان میں داعش کی موجودگی سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے ترجمان کا کہنا تھا کہ پاکستان تمام خدشات سے آگاہ ہے اور داعش کی پاکستان میں سرگرمیوں کو روکنے کیلئے اقدامات کئے جا رہے ہیں۔

حکومتِ پاکستان نے جن کالعدم تنظیموں پر پابندی عائد کر کے ان کے اثاثے منجمد کئے ہیں ان میں حرکت الجہاد اسلامی، حرکت المجاہدین، فلاحِ انسانیت فاﺅنڈیشن، امہ تعمیر نو، حاجی خیر اللہ حاجی ستار منی ایکسچینج، راحت لمیٹڈ، روشن منی ایکسچینج، الاختر ٹرسٹ، الراشد ٹرسٹ، حقانی نیٹ ورک اور جماعت الدعوة شامل ہیں۔

مزید : قومی /Headlines


loading...