سندھ اسمبلی میں ایم کیو ایم اور پیپلز پارٹی کی ’کپڑوں اور گاڑیوں‘ پر بحث

سندھ اسمبلی میں ایم کیو ایم اور پیپلز پارٹی کی ’کپڑوں اور گاڑیوں‘ پر بحث
سندھ اسمبلی میں ایم کیو ایم اور پیپلز پارٹی کی ’کپڑوں اور گاڑیوں‘ پر بحث

  


کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) سندھ اسمبلی میں اس وقت مضحکہ خیز صورتحال پیدا ہو گئی جب متحدہ قومی موومنٹ کے ممبر صوبائی اسمبلی اپوزیشن لیڈر شہریار مہر نے الزام عائد کیا کہ ٹی ایم او کی طرف سے ان سے پیسے طلب کئے جاتے ہیں کہ وزیر بلدیات نے گاڑی خریدنی ہے۔ اس پر صوبائی وزیر اطلاعات شرجیل انعام میمن نے بھی سیخ پا ہو کر انہیں برجستہ جواب دیا کہ یہاں لاکھوں روپے کے ارمانی کے سوٹ کس نے پہن رکھے ہیں؟

صورتحال اس وقت اور بھی تلخ ہو گئی جب فوری طور پر شہریار مہر کا کہنا تھا کہ دو کروڑ کی گاڑی وزیر بلدیات کی ملکیت ہے نہ کہ میری۔ اس پر سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی نے مداخلت کرتے ہوئے ٹی ایم او سے متعلق تحقیقات کروانے کا اعلان کیا تو معاملہ رفع دفع ہوا۔

مزید : قومی


loading...