کینسر سے وفات پانے والی 18سالہ لڑکی نے آخری خط میں زندگی کے بارے میں ایسی بات لکھ دی کہ پڑھ کر آپ کا دل بھی پگھل جائے گا

کینسر سے وفات پانے والی 18سالہ لڑکی نے آخری خط میں زندگی کے بارے میں ایسی بات ...
کینسر سے وفات پانے والی 18سالہ لڑکی نے آخری خط میں زندگی کے بارے میں ایسی بات لکھ دی کہ پڑھ کر آپ کا دل بھی پگھل جائے گا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)برطانیہ کی ایک لڑکی نے اپنے زندگی کے آخری خط میں ایک ایسی بات لکھ دی جسے پڑھ کر آپ کا دل پسیج جائے گا، دراصل اس لڑکی نے اپنے اس خط میں زندگی کے اصل راز سے پردہ اٹھایا ہے ۔

18سالہ لڑکی جیس فیئرکلف ایک خطرناک قسم کے کینسر کا شکارہوئی تھی۔ ڈاکٹروں نے اسے بتایا کہ وہ محض چند دن تک زندہ رہے گی۔برطانیہ کے شہر لیورپول کی رہائشی جیس نے اپنے ان آخری دنوں میں کاغذ قلم اٹھایا اور اپنے خاندان اور دوستوں کے نام ایک خط لکھا، اس خط میں اس نے ان چیزوں کی ایک فہرست مرتب کی جو اس کے لیے بہت اہم تھیں اور وہ زندگی میں کرنا چاہتی تھی۔ برطانوی اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق اپنی اس تحریر میں جیس نے لکھا ہے کہ ”ہرگزرتے لمحے میں خوش رہنا ہی دراصل زندگی کا راز ہے خواہ یہ خوشی کسی بھی بہانے سے حاصل کی جائے۔“اس کے علاوہ اس نے لکھا کہ وہ اپنی فیملی اور دوستوں کے ساتھ رہنا چاہتی ہے، اپنی ڈائری لکھنا چاہتی ہے اور برائی کو اچھائی سے ختم کردینا چاہتی ہے۔ اس نے لکھا کہ ”میں پڑھنا چاہتی ہوں، سننا چاہتی ہوں، باتیں کرنا چاہتی ہوں، لکھنا چاہتی ہوں، ڈرائنگ بنانا چاہتی ہوں اور موسیقی کی دھنیں تخلیق کرنا چاہتی ہوں، کیونکہ یہ چیزیں انسان کو خوشی دیتی ہیں اور میرا عقیدہ ہے کہ خوش رہنا اور دوسروں کی ممکنہ حد تک بھلائی کرنا ہی دراصل زندگی ہے۔“

مزید جانئے: کیا آپ کھانا لائے ہیں؟فاقوں کی شکار شامی بچی کا سوال

جیس یہ تحریر لکھنے کے کچھ ہی دن بعد دنیا سے گزر گئی مگر اس کی اس تحریر سے متاثر ہو کر اس کی ایک دوست لز ٹیلر نے اس کے نام پر ایک فنڈریزنگ مہم شروع کی ہے جسے وہ کینسر کے مریضوں کی فلاح کے لیے صرف کرے گی۔ لزٹیلر نے ویب سائٹ جسٹ گیونگ(JustGiving) پر چندہ اکٹھا کرنے کے لیے ایک پیج بنایا ہے۔ لز ٹیلر نے ڈیلی میل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ”جیس انتہائی خوش مزاج اور مثبت سوچ رکھنے والی لڑکی تھی، اس نے کبھی کسی کی شکایت نہیں کی۔ ڈاکٹروں نے اسے صرف 7دن کی مہلت دی تھی، اس نے اپنے ماں باپ کے بازوﺅں میں دم توڑا۔ وہ ہمارے دلوں میں ہمیشہ زندہ رہے گی۔ جیس کی موت کے بعد اس کی یہ تحریر اس کی والدہ نے فیس بک پر پوسٹ کی، جس کے بعد میں نے اس کی دوسروں کی فلاح کے لیے کام کرنے کی خواہش کی تکمیل کے لیے فنڈریزنگ شروع کی۔ “

مزید :

ڈیلی بائیٹس -